حکومت نےروپے کوخود ڈی ویلیو کیا، یا مارکیٹ میں ڈالر کی ڈیمانڈ بڑھ گئی؟


کراچی (24 نیوز): حکومت نے روپے کو خود ڈی ویلیو کیا، یا مارکیٹ میں ڈالر کی ڈیمانڈ بڑھ گئی، ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر مزید 1.33 فیصد کم ہو گئی، دو روز میں روپے کی قدر 2.7 فیصد کم ہو چکی ہے۔

انٹربینک مارکیٹ میں ہفتے کے پہلے روز ٹریڈنگ کے آغاز پر ڈالر 3 روپے مہنگا ہو کر 110 روپے کا ہو گیا، تاہم اس کے بعد کاروبار کے دوران اتار چڑھاو جاری رہا اور کاروباری اوقات کے اختتام پر ڈالر کی قیمت 108 روپے 42 پیسے رہی۔ ذرائع کے مطابق ڈالر کی قیمت 109 روپے تک پہنچنے کے بعد مرکزی بینک کی طرف سے مارکیٹ میں ڈالر کی سپلائی ہوئی جس سے قیمت کم ہونا شروع ہوئی، اوپن مارکیٹ میں ڈالر 109 روپے 50 پیسے تک فروخت ہوتا رہا، گزشتہ ہفتے آخری کاروباری روز بھی روپے کی قدر میں 1.4 فیصد کمی ہوئی تھی۔

اسٹیٹ بینک کی طرف سے بینکوں کو اپنے طور پر کام کرنے کی اجازت دینے کے باعث کرنسی ڈیلرز کا خیال ہے کہ حکومت باقاعدہ اعلان کیے بغیر مارکیٹ رجحانات کے نام پر روپے کی قدر میں کمی کر رہی ہے، اسٹیٹ بینک کے مطابق روپے کی قدر میں کمی مارکیٹ میں ایکسچینج ریٹ میں ایڈجسٹمنٹ ہے، برآمد کنندگان کافی عرصے سے روپے کی قدر میں کمی کا مطالبہ کر رہے ہیں، جبکہ ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف کی طرف سے بھی روپے کی قدر میں فوری طور پر کم سے کم 6 فیصد کمی کا کہا جا رہا ہے۔