بچے ماں کے پیٹ میں ٹانگیں کیوں مارتے ہیں؟

بچے ماں کے پیٹ میں ٹانگیں کیوں مارتے ہیں؟


لندن ( 24 نیوز ) ماں کے پیٹ میں بچے کی حرکت اور لاتیں چلانا صحت مند بچے کی علامت تصور کیا جاتا ہے تاہم سائنسدانوں نے اس کی ایک دلچسپ وجہ معلوم کی ہے۔ماہرین نے انکشاف کیا ہے کہ ماں کے پیٹ میں بچہ اپنے پیروں کی حرکت سے خود اپنے جسم کا تعین کرتا ہے اوراپنی اطراف اور ماحول کا جائزہ لیتا ہے۔ 

یونیورسٹی کالج لندن کے ماہرین نے قبل ازوقت دنیا میں آنے والے نومولود بچے جنہیں ماں کے پیٹ میں ہونا چاہیے تھا، ان کی دماغی لہروں کا جائزہ لیا اور نیند کے دوران بچوں کی آنکھوں کی ریپڈ آئی موومنٹ کونوٹ کیا،  جس سے معلوم ہوا کہ ایسے بچوں کے دماغ کی لہریں بہت تیز ہوتی ہیں۔ ماہرین کے مطابق زچگی کے آخری دنوں میں بچے اپنے پاؤں بہت زیادہ چلاتے ہیں لیکن قبل ازوقت پیدا ہونے والے بچوں میں یہ رحجان زیادہ ہوتا ہے جس کے باعث وہ اپنے اردگرد کے ماحول کو جاننے کی کوشش کرتے ہیں۔

ماہرین نے اس عمل کیلئے 19 نومولود بچوں کے دماغ میں الیکٹروڈز لگا کران کے ہاتھ پاؤں چلانے کی صلاحیت اور دماغی سرگرمی کو نوٹ کیں، چند ہفتوں بعد بچوں کی دماغی لہریں کم ہونا شروع ہوگئیں اور انہوں نے اپنی حرکات بند کردیں۔پروفیسر لورینزو فیبریزی کا کہنا ہے کہ یہی عمل چوہوں پر بھی آزمایا گیا، وہ بھی ایسی حرکات کے ذریعے اردگرد کے ماحول کو جانچنے کی کوشش کرتے ہیں۔