گیس بحران کیلئے تیار ہوجائیں ۔ ۔ ۔

گیس بحران کیلئے تیار ہوجائیں ۔ ۔ ۔


اسلام آباد(24نیوز) سوئی گیس سپلائی کمپنیوں نےصنعتوں،سی این جی اورکیپٹیوپاور پلانٹس کو گیس کی سپلائی معطل کرنے کے احکامات جاری کردیئے۔

وہی ہوا جس کا ڈر تھا،آئل مافیا اپنا کام دکھا گیا۔ آخر کار ملک میں گیس کا مصنوعی بحران پیدا کر ہی دیا گیا۔ ایل این جی کے جہاز کی منسوخی کی وجہ سے بحران پیدا ہوا۔ سوئی ناردرن اور سدرن گیس کمپنیوں نے صنعتوں،سی این جی اور کیپٹیو پاور پلانٹس کو گیس کی سپلائی معطل کرنے کے احکامات جاری کر دیئے۔

سوئی ناردرن گیس کمپنی نے نوٹی فیکیشن جاری کیا کہ 12 دسمبر کو 24 گھنٹے تک خیبر پختونخواہ اور پنجاب میں تمام صنعتوں اور سی این جی سیکٹر کو گیس کی سپلائی بند رہے گی۔

سوئی سدرن گیس کمپنی نے حکم نامہ جاری کیا کہ ملک میں گیس کی قلت ہے،  کوئٹہ اور اندرون سندھ میں سردی بڑھنے کے سبب گیس پریشر میں غیر متوقع کمی ہو گئی ہے جس کے باعث گھریلو صارفین کو سپلائی برقرار رکھنے کیلئے سندھ اور بلوچستان کی صنعتوں کو بھی گیس کی سپلائی غیر معینہ مدت کیلئے بند کر دی گئی ہے۔ کیپٹیو پاور پلانٹس کو بھی گیس فراہم نہیں کی جائے گی۔دونوں گیس کمپنیوں نے جواز بتایا ہے کہ ایل این جی ٹرمینل میں خرابی ہے جس کی مرمت کے لیے گیس معطل کی گئی ہے۔

وزارت پیٹرولیم کے ذرائع نے 24 نیوز کو بتایا کہ ایل این جی کا جہاز منسوخ کرکے فرنس آئل کی کھپت کا جواز پیدا کیا گیا کیونکہ حکومت نے فرنس آئل کی درآمد پر پابندی لگا رکھی تھی، چند ریفائنریوں کو فائدہ پہچانے کے لیے یہ اقدام کیا گیا۔ سی این جی ایسوسی ایشن نے بندش کے باعث احتجاج کا اعلان کیا۔

یاد رہے کہ 24 نیوز نے گزشتہ ہفتے خبر دی تھی کہ ملک آئل مافیا کو فائدہ پہچانے کے لیے ملک میں گیس کا بحران پیدا کرنے کا منصوبہ تیار کر لیا گیا ہے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔