ڈپٹی میئر کراچی ارشد ووہرا کے خلاف ریفرنس کی سماعت


کراچی (24نیوز) ڈپٹی میئر کراچی ارشد ووہرا کے خلاف ریفرنس کی سماعت ،ارشد ووہرا کے وکیل نے جواب جمع کرانے کے لیے الیکشن کمیشن سے مہلت مانگ لی،فاروق ستار کو جواب کی کاپی 19 جنوری تک فراہم کی جائے .

تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 4 رکنی بنچ نے ارشد ووہرا کے خلاف کیس کی سماعت کی۔ایم کیو ایم کے وکیل ایس اے اقبال قادری جبکہ ارشد ووہرا اور ان کے وکیل حفیظ الدین الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے۔وکیل ارشد ووہرا نے دلائل میں کہا کہ کچھ دستاویزات لیٹ ملے ہیں۔ اگر آج سماعت کرنا چاہتے ہیں تو جواب جمع کرا دیتا ہوں لیکن ابھی میرے پاس جواب نا مکمل ہے۔ اپنے جواب کے ساتھ کچھ شواہد بھی ساتھ لگانا چاہتا ہوں۔

دوسری جانب  فاروق ستار کے وکیل نے کہا کہ ہمیں بھی تیاری کے لیے جواب کی کاپی 3 سے 4 دن پہلے فراہم کی جائے۔جبکہ ارشد وہرا کے وکیل نے کہا کہ میں اپنے جواب اور شواہد میں ثابت کروں گا کہ ایم کیو ایم سے ایم کیو ایم پاکستان کیسے بنی۔19 جنوری تک اپنا جواب ایم کیو ایم کے وکیل کو پیش کر دوں گا۔ چیف الیکشن کمشنر نے ریمارکس دیے کہ آئندہ سماعت پر جواب پر دلائل دئیے جائیں۔ سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما بیرسٹر سیف نے کہا کہ جس ایم کیو ایم پر تنقید کی جارہی ہے اس کے ٹکٹ پر ارشد ووہرا ڈپٹی میئر بنے۔سیاسی الزام تراشی کی جا رہی ہے۔فاروق ستار ہمارا قائد ہے وہ ایم کیو ایم کے سربراہ ہیں۔

بیرسٹر سیف کا مزید کہنا تھا کہ قصور کا واقعہ انتہائی افسوس ناک ہے۔ ڈر ہے سیاسی بیان بازی میں کہیں قاتل نہ بچ جائے۔