میر عبدالقدوس بزنجو بلوچستان کے نئے وزیر اعلیٰ نامزد


کوئٹہ (24 نیوز) بلوچستان کے نئے وزیر اعلیٰ کے نام پر ن لیگ اور ق لیگ کے اراکین میں اتفاق، میرعبدالقدوس بزنجو نئے قائد ایوان نامزد۔

تفصیلات کے مطابق ثناء اللہ زہری کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک لانے والے ارکان نے بلوچستان کے نئے وزیراعلیٰ کے عہدہ کے لیے پاکستان مسلم لیگ (ق) کے رکن صوبائی اسمبلی عبدالقدوس بزنجو  کو  نامزد کردیا۔ اپنی نامزدگی پر عبدالقدوس بزنجو نے تمام ارکان کا شکریہ ادا کیا۔

عبدالقدوس بزنجو قائد ایوان کے امیدوارکی حیثیت سے جمعہ کو کاغذات نامزدگی جمع کرائیں گے۔ نامزد وزیراعلیٰ پختونخوا ملی عوامی پارٹی سے بھی حمایت حاصل کرنے کے لیے رابطہ کریں گے۔

میر عبدالقدوس بزنجو نے یکم جنوری 1974کو آبائی گائوں شاندی جھائو تحصیل آواران میں میر عبدالمجید بزنجو کے گھر آنکھ کھولی جو پیشہ کے اعتبار سے زمین داروسیاست دان تھے۔

میر عبدالمجید بزنجو ڈپٹی سپیکر، وزیر اور کئی مرتبہ رکن صوبائی اسمبلی بھی رہے۔ میر عبد القدوس بزنجو نے ابتدائی تعلیم آواران سے حاصل کی جبکہ جامع بلوچستان سے انگریزی میں ماسڑز کیا اور پھر زمانہ طالب علمی ہی میں باقاعدہ سیاست کا اغاز کیا۔

عبد القدوس بزنجو 2002میں پہلی مرتبہ پی پی 41 آواران سے رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے اور 2002 سے 2007 تک وزیر لائیو سٹاک رہے۔ 2013 کے انتخابات میں بھی رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے اور 2013 سے 2015 تک ڈپٹی سپیکر کے عہدہ پر فرائض انجام دیئے۔

 تاہم سابق وزیر اعلی نواب ثناء اللہ خان زہری سے اختلافات کے باعث ڈپٹی سپیکر کے عہدہ سے مستععفی ہو گئے تھے۔