”تو ہاں کر، یا ناں کر“خاتون نے یکطرفہ محبت میں 65ہزار میسج بھیج دئیے

”تو ہاں کر، یا ناں کر“خاتون نے یکطرفہ محبت میں 65ہزار میسج بھیج دئیے


واشنگٹن ( 24نیوز )’تو ہاں کر، یا ناں کر، تو ہے میری ک۔۔ ک۔۔ کرن۔۔“ لوگ پیار میں ٹھکرایا جانا قبول نہیں کر پاتے اور انکار کے بعد عجیب و غریب حرکتیں کرنے لگتے ہیں،حال ہی میں پاکستان کے ایک مقامی اخبار میں چھپی خبر کا تراشہ وائرل ہوا جس میں ایک نوجوان نے تھانے میں درخواست دی ہے کہ ایک لڑکی نے میرا دل چرا لیا ہے اس پر مقدمہ درج کیا جائے،تھانے والوں نے مقدمہ کیادرج کرنا تھا کہ درخواست دینے والا دنیا میں مذاق بن گیا۔

ایسی مثالیں اخباروں اور ٹی وی چینل پر نشر ہونے والی خبروں اور ان کی سرخیوں میں اکثر دیکھنے کو ملتی ہیں اور ایسا ہی کچھ امریکہ میں ہوا جہاں ایک خاتون نے ایک شخص کو لگاتار 65000 پیغامات بھیج دئیے،دونوں ایک ڈیٹِنگ ویب سائٹ کے ذریعے ملے تھے، اور خاتون اس شخص کو پسند کرنے لگی تھیں، بعد میں جب اس شخص نے خاتون کے پروپوزل کو ٹھکرا دیا تو وہ یہ بات قبول نہیں کر پائیں اور انہیں لگاتار بلیک میل کرنے لگیں۔

اتنا ہی نہیں گھر تک پہنچ گئیں، بات اتنی بڑھ گئی کہ پولیس نے خاتون کو گرفتار کر کے جیل بھیج دیا، پولیس کی پوچھ گچھ کے دوران خاتون نے کہا کہ اس شخص سے مل کر مجھے ایسا لگا کہ جیسے میرا ہمدم مل گیا، مجھے اندازہ نہیں تھا کہ میرے میسیجز سے وہ اتنا پریشان ہو جائے گا، ماہرینِ نفسیات کا خیال ہے کہ وہ ایک ذہنی بیماری سے گزر رہی ہیں جسے ’اوبسیسِو لو ڈِس آرڈر( جنون کی حد تک عشق کا عارضہ) کا نام دیا گیا ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer