نواز شریف چیئرمین نیب کیخلاف ڈٹ گئے

نواز شریف چیئرمین نیب کیخلاف ڈٹ گئے


اسلام آباد( 24نیوز ) سابق وزیر اعظم نواز شریف چیئرمین نیب سے کیے گئے مطالبات پر ڈٹ گئے ہیں، ان کا کہنا ہے کہ چیئرمین آمروں کے دور میں بھی ایسا نہیں دیکھا جو آج ہورہا ہے۔
اسلام آباد کی احتساب عدالت کے کمرے میں صحافیوں سے غیررسمی گفتگو کے دوران نواز شریف نے کہا کہ چیئرمین نیب کی جانب سے جاری ہونے والا اعلامیہ چھوٹا نہیں بلکہ کافی سنجیدہ معاملہ ہے اور اس سے پیچھے نہیں ہٹیں گے، اس سے زیادہ اب حالات کیا خراب ہوں گے، آمروں کے دور میں بھی ایسا نہیں ہوا، ا?ج پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس بھی اسی لیے بلایا ہے۔

یہ بھی پڑھیے: ’’چیئرمین نیب چوبیس گھنٹوں میں شواہد لائیں یا معافی مانگیں اور استعفیٰ دیں‘‘

مسلم لیگ (ن) کے قائد نے کہا کہ موجودہ حالات پر گزشتہ روز وزیراعظم سے بات ہوئی ہے، آج سی ای سی اجلاس میں اہم فیصلے کریں گے،سابق وزیر اعظم نواز شریف نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ نیب کی طرف سے میرے پر ایک غیر معروف کالم کو بنیاد بناکر الزام لگایا گیا ہے،چیئرمین نیب کی پریس ریلیز میری باتوں کی توثیق ہے،نیب کو طوطا مینہ کی کہانیوں سے کچھ نہیں ملا تو ذاتی عناد پر اتر آیا ہے،چیئرمین نیب اگر چوبیس گھنٹوں میں معافی نہیں مانگتے تو استعفیٰ دے کر گھر چلے جائیں۔

پڑھنا نہ بھولیں:احتساب کرنا اگر جرم ہے تو یہ جرم ہوتا رہے گا: چیئرمین نیب

گزشتہ روز انہوں نے پریس کانفرنس میںچیئرمین نیب سے استعفیٰ کا مطالبہ کیا تھا ان کا کہنا تھا کہ نیب کی طرف سے ن لیگ کے ارکان پر پارٹی چھوڑنے اور آزاد الیکشن لڑنے کیلئے دباﺅ ڈلا جارہا ہے،ہمارے لوگوں پر مقدمات بنائے جارہے ہیں،زمینی مخلوق اس بار خلائی مخلوق کو شکست دے گی،خلائی مخلوق نظر نہیں آتی زمینی نظر آتی ہے، کوئی ثبوت ہوتا تو آٹھ دن میں فیصلہ ہوجاتا،آٹھ ماہ سے یہ کیس چل رہا ہے،مجھے لگتا ہے یہ قیامت تک چلانا چاہتے ہیں،اس کیس میں کچھ نہیں یہ صرف کچھ گھڑنا چاہتے ہیں،میں ستر پیشیاں بھگت چکا ہوں،سزا ہوئی تو اپیل کروں گا نہ معافی مانگوں گا،جن لوگوں نے پارٹی چھوڑی ہے انہوں نے چھوڑی نہیں چھڑوائی گئی ہے،پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی کے گٹھ جوڑ کا ثبوت طاہرالقادری کا لاہور کا جلسہ ہے،عمران خان نے سینیٹ میں تیر کے نشان پر ووٹ دیا،لگتا ہے عام انتخابات میں بھی کہیں تیر پر مہر نہ لگادیں۔
سابق وزیر اعظم نواز شریف ایک بار پھر احتساب عدالت میں پیش ہوگئے ہیں،پیشی کے وقت ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر)محمد صفدر اور دیگر مسلم لیگی رہنما ءبھی ساتھ تھے۔