ایرانی شاپنگ مال میں 'داعش' گھس آئی


تہران ( 24نیوز ) ایران کے شاپنگ مال میں انوکھی شوٹنگ ، فنکاروں کا داعش کے لباس میں شوٹنگ نے مال میں موجود لوگوں کو سہم کر بھاگنے پر مجبور کردیا۔

ذرائع کے مطابق فلم میں شام کے موضع پر بنائی جارہی ہے جس میں والد اور اس کا بیٹا لوگوں کی مدد کے لیے ملک شام جاتے ہیں، لیکن داعش کے دہشتگرد انھیں حراست میں لے لیتے ہیں.فلم کا نام دمشق ٹائمز ہے اور اس کے ہدایت کار ابراہیم حتمیکیا ہیں۔ ہوا کچھ یوں کہ فلم کے فنکار اچانک سے شاپنگ مال گھستے ہیں اور تصاویر بنانے کے ساتھ ساتھ اداکاری بھی کرنے لگے۔

یہ بھی پڑھیں: بھارتی اداکار سلمان خان نے پہلی تنخواہ بتا کر دنیا کو حیران کردیا

ان میں سے ایک فنکار نے جنگجو کا روپ بنایا ہوا تھا جس نے اللہ اکبر کا نارہ لگاتے ہوئے گھوڑا مال کے اندر دوڑا دیا ، اس جنگجو نے جعلی بم بھی سینے سے باندھا ہوا تھا۔ یہ منظر دیکھنا ہی تھا کہ شاپنگ مال میں بھگدڑ مچ گئی حتی کہ دکاندار بھی اپنی دکانیں کھلی چھوڑ کر بھاگ گئے۔

  ایرانی فلم ہدایت کاروں نے  اسے ایکٹ کو  بڑی غلطی اور مضحکہ خیز عمل قراردیا ہے۔ ایرانی پولیس کے مطابق ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جائے گی اور انکے خلاف مجرمانہ مقدمات بھی کیے جائیں گے۔جبکہ فلم ڈائریکٹر نے ایسے اقدام سے معافی مانگ لی ہے۔

ویڈیوز دیکھیں: 

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔