وزیراعظم کاآئی ایم ایف کی شرائط ماننے سے انکار

وزیراعظم کاآئی ایم ایف کی شرائط ماننے سے انکار


اسلام آباد( 24نیوزپاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات میں ڈیڈ لاک برقرارہےذرائع کا دعوی ہےکہ وزیراعظم نے آئی ایم ایف ،وزارت خزانہ سٹاف لیول معاہدے  کا مسودہ مسترد کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نے وزارت خزانہ اور آئی ایم ایف کےسٹاف لیول کے درمیان طے پانے والے معاہدے کے مسودے کو مسترد کردیا ہے،ذرائع کاکہناتھاکہ وزیراعظم نے مہنگائی کی شرائط ماننے سے انکار کردیا ہے، انہوں نے ٹیکسوں کا بوجھ کم کرنے کی ہدایت کردی  ہے،اس سلسلے میں پاکستان نے آئی ایم ایف کی بیشتر شرائط مان لیں جبکہ ایف بی آر کا ریونیو ٹارگٹ 5300 ارب روپے تک مقرر کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

ذرائع کاکہناتھاکہ بجلی اور گیس کی قیمتیں دو سال میں بڑھائی جائیں گی، بجٹ خسارے کو 4.5 فیصد تک محدود کیا جائے گا،علاوہ ازیں مذاکرات کامیاب ہوئےتو پاکستان کوتین سال کیلئے6 ارب ڈالرزکا قرض ملے گا،  آئی ایم ایف سے معاہدےکے بعد حکومت بجٹ میں عوام پر 700 ارب روپے کےٹیکسز کا بوجھ ڈالے گی,شرح سود 12 فیصد تک بڑھنےاورڈالرکی قیمت میں اضافہ بھی متوقع ہے۔