غیر قانونی تعمیرات مسمار کرنے کیلئے ٹاسک فورس کا قیام


کراچی( 24نیوز ) کراچی کے علاقے صدرایمپریس مارکیٹ کے اطراف آپریشن جاری ہے ،آپریشن انسدادتجاوزات کے ڈاریکٹربشیرصدیقی کی نگرانی میں کیاجارہاہے۔

تفصیلات کے مطابق صدرایمپریس مارکیٹ کےاطراف تجاوزات کےخلاف کارروائی جاری ہیں، اس موقع میڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے,سینیئر ڈائریکٹر انسداد تجاوزات بشیر احمد صدیقی کا کہنا تھا کہ دو تین  گھنٹوں میں ایمپریس مارکیٹ کے ارد گرد تجاوزات کا خاتمہ کردیا جائے گا اور 15 روز میں اسے اصل شکل میں بحال کردیں گے، ایمپریس مارکیٹ میں بھاری مشینری کے ساتھ تجاوزات کو گرایا جارہا ہے۔

اس موقع پرمیئروسیم اخترنے میڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ دکانداروں سے ہماری کوئی ذاتی دشمنی نہیں،  پارکوں کے زمین سے متعلق سپریم کورٹ کے احکامات پرمعاہدہ ختم کرکے دکانداروں کوایک ماہ پہلے نوٹس دیا تھا، ماضی میں جو لیزیں دی ہیں وہ غلطیاں نہیں دہرائیں گے،ایمپریس مارکیٹ کے اطراف کپڑا،خشک میوہ جات اورپرندہ مارکیٹ میں قائم دکانیں اوردیگرتجاوزات کے خلاف آج ساتویں روز ایم سی کےعملہ نے بھاری مشینری کے ہمراہ تجاوزات مسمار کی ہیں۔ 

سینیئر ڈائریکٹر انسداد تجاوزات بشیر احمد صدیقی کا کہنا تھا کہ تجاوزات پارک کی زمین پرقائم کی گئی ہیں،آج ایک ہزار45غیرقانونی دکانیں گرائی جائیں گی، آپریشن کےبعدکےایم سی اورپولیس صدرمیں جگہ جگہ کیمپ لگائےگی,صدرمیں تجاوزات کوروکنےکیلیےٹاسک فورس بنائی گئی ہے، بشیر احمد صدیقی کا کہنا تھا کہ رات کو تمام دکانداروں کو دکانیں خالی کرنے کا کہا گیاتھا اس کے بعد صبح چھ بجے پھر ان کو کہا کہ آپ دکانیں خالی کردیں۔

علاوہ ازیں مظاہرین سے نمٹنے کے لئے پولیس اور رینجرز اہلکار بھی موجود ہیں،واضح رہے کہ  شہر قائد میں تجاوزات کے خلاف آپریشن کو آج ساتوں روز ہے ، صدر ایمپریس مارکیٹ کے اطراف میں قائم غیر قانونی تعمیرات گرای جارہی ہیں۔