کم عمر خاتون رکن اسمبلی کو گھرلینے کیلئے تنخواہ کا انتظار

کم عمر خاتون رکن اسمبلی کو گھرلینے کیلئے تنخواہ کا انتظار


24نیوز :ہر انسان کی خواہش ہوتی ہے کہ اس کاا پنا گھر ہو ،اپنے خاندان کے ساتھ رہے لیکن دنیا میں انسان کی خواہشات کے برعکس بھی بہت کچھ ہوتا ہے،کسی کو سر چھپانے کیلئے گھر کی چھت نہیں ملتی تو کسی کو کھانے کیلئے دو وقت کی روٹی میسر نہیں،مہذب اور ترقی یافتہ معاشروں میں تو یہ چیزیں میسر نہ ہونے کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا،لیکن امریکہ میں ایسا ہوا ہے۔
امریکی کانگریس میں منتخب ہونے والی سب سے کم عمر خاتون کو ایک مسئلہ درپیش ہے، وہ واشنگٹن میں اس وقت تک فلیٹ کرائے پر نہیں لے سکتیں جب تک انھیں پہلی تنخواہ نہیں مل جاتی۔
نومنتخب رکن کانگریس الیگزینڈریا اوکاسیو کورٹیز نے امریکی میڈیا سے بات کرتے ہوئے اس بات کا انکشاف کیا کہ وہ واشنگٹن ڈی سی میں کرائے کا مکان لینے سے قبل اپنی پہلی تنخواہ کا انتظار کر رہی ہیں، اوکاسیو کورٹیز کو 'ملینیئل کانگریس وومن' یعنی ہزارسالہ کانگریس خاتون کہا جا رہا ہے۔
اس کے جواب میں اوکاسیو کورٹیز نے ٹویٹ کیا کہ انھیں تصویر کی شوٹ کے لیے لباس مستعار دیے گئے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ 'میں اپنی کچھ بچائی ہوئی رقم پر گزر بسر کر رہی ہوں اور میں امید کرتی ہوں کہ جنوری تک چلا سکوں، ان کے اس بیان پر بہت سے لوگوں نے ان سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔


یاد رہے وزیر اعظم عمران خان جب قومی اسمبلی میں آئے تو تصویر بنوانے کیلئے ان کے پاس بھی واسکٹ نہیں تھی اور انہوں نے اسمبلی کے ملازم سے ادھا ر لے کرتصویر بنوائی تھی۔