کراچی: نجی ہوٹل میں زہریلا کھانا کھانے سے 2 بچے جاں بحق، والدہ کی حالت غیر

کراچی: نجی ہوٹل میں زہریلا کھانا کھانے سے 2 بچے جاں بحق، والدہ کی حالت غیر


کراچی(24نیوز) کراچی کے علاقے ڈیفنس میں واقع ریسٹورنٹ سے مضر صحت کھانا اور ٹافیاں کھانے سے دو معصوم بچے زندگی کی بازی ہار گئے، جبکہ والدہ اسپتال میں زیر علاج ہیں. وزیراعلیٰ سندھ اور آئی جی نے بچوں کی اموات کا نوٹس لے لیا.

کراچی کے علاقے ڈیفنس زمزمہ میں واقع ریسٹورنٹ میں مضر صحت کھانا اور سی ویو پرپلے لینڈ میں مضر صحت ٹافیاں کھانے سے دو معصوم بچے جاں بحق ہوگئے. جاں بحق بچوں کی شناخت ڈیڑھ سالہ احمد اور پانچ سالہ محمد کے نام سے ہوئی ہے جبکہ والدہ عائشہ تاحال اسپتال میں زیر علاج ہیں۔ ایس ایس پی ساؤتھ کے مطابق متاثرہ خاندان نے ہفتے کی رات ایک ریسٹورنٹ میں کھانا اور پلے لینڈ میں ٹافیاں کھائی تھیں۔ انتظامیہ نے ریسٹورنٹ اورپلے لینڈ کوسیل کر کے تحقیقات شروع کردیں. پولیس کے مطابق بچوں کو الٹیوں کی شکایت پر اسپتال لایا گیا، جہاں دوپہر ڈھائی بجے بچے انتقال کرگئے۔

واقعے کے بعد سندھ فوڈ اتھارٹی بھی متحرک ہوئی اور ٹیم نے ریسٹورنٹ کا دورہ کیا اور کھانے کے نمونے حاصل کر لئے، ڈائریکٹر سندھ فوڈ اتھارٹی ابرار شیخ کہتے ہیں جانچ پڑتال کیلئے کھانے کے نمونے لیبارٹری بھجوائیں گئےہیں. وزیراعلیٰ سندھ اور آئی جی سندھ نے بچوں کی اموات کا نوٹس لیتے ہوئے کمشنر کراچی اور ایس ایس پی ساوتھ سے فوری طور پر رپورٹ طلب کرلی.

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔