امریکا نے کالعدم ٹی ٹی پی کے سربراہ سمیت متعدد افراد کو عالمی دہشت گرد قرار دیدیا

 امریکا نے کالعدم ٹی ٹی پی کے سربراہ سمیت متعدد افراد کو عالمی دہشت گرد قرار دیدیا


واشنگٹن( 24نیوز ) امریکہ نے کالعدم تحریک طالبان پاکستان کےسربراہ سمیت 15افرادکوعالمی دہشت گردقراردےدیا،امریکی صدرکے ایگزیکٹو آرڈرکے ذریعے ان افرادپرپابندیاں لگائی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق9/11کی 18ویں برسی پردہشت گردوں پر امریکہ نے نئی پابندیاں عائدکی گئیں ہیں، امریکہ نے کالعدم تنظیم ٹی ٹی پی کے سربراہ سمیت متعدد افراد کو عالمی دہشت گرد قرار دے دیا، امریکہ نے مختلف دہشت گردوں اور ان کے مددگاروں پر نئی پابندیاں لگانے کا اعلان کیا ہے جن میں فلسطینیوں کے گروپ حماس اور ایران کے سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی سے منسلک افراد شامل ہیں، یہ پابندیاں نائن الیون کی 18 ویں برسی کے موقع پر لگائی گئی ہیں۔

امریکہ کے محکمہ خزانہ کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ان پابندیوں کا ہدف حماس، القاعدہ، داعش اور ایران کے سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی سے منسلک 15 افراد اور عناصر شامل ہیں،یہ پابندیاں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ایک حالیہ ایگزیکٹو آرڈر کے تحت لگائی گئی ہیں،کالعدم تنظیم ٹی ٹی پی کے سربراہ مفتی نور ولی محسود کو بھی عالمی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق محسود کی قیادت میں کالعدم تنظیم نے پاکستان بھر میں متعدد ہلاکت خیز حملوں کی ذمہ داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا ہے، امریکہ کا کہنا ہے کہ مفتی نور ولی محسود امریکہ اور افغانستان کی فورسز کے خلاف لڑنے پر یقین رکھتا ہے۔