آسٹریلوی ایوان میں کشمیر کی آزادی کی گونج

آسٹریلوی ایوان میں کشمیر کی آزادی کی گونج


کنبیرا(24نیوز)  آسٹریلوی ایوان میں کشمیر کی آزادی کی گونج اٹھ گئی۔ آسٹریلوی سینیٹر مہرین فاروقی کشمیروں کے حق میں بول اٹھیں۔

پارلیمنٹ میں اس دلیری سے بولیں کہ سب ارکان تائید کئے بغیر نہ رہ سکے،  انہوں نے دنیا کو بتایا کہ کشمیر کی حالت معمول پر نہیں ہیں، پورا کشمیر بھارت کے خلاف ہو چکا ہے کیونکہ مودی سرکار تمام سیاسی رہنماؤں کو گرفتار کر چکی ہے۔ پانچ اگست سے آج تک سڑکیں پر ہو کا عالم ہے، مسلسل لاک ڈاؤن سے زندگی کا ہر پہلو اور کاروبار متاثر ہورہا ہے، وادی کی ہر شاہراہ پر لاٹھیاں اور بندوقیں تھامے اہلکاروں کی قطاریں ہیں، جابجا بکتر بند گاڑیاں نظر آتی ہیں۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل کی رپورٹ کے مطابق1989 سے اب تک پچاس ہزار کشمیری آزادی کی راہ میں شہید ہو چکے ہیں، انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کو حق خود ارادیت دینا ہی واحد حل ہے، انہوں نے آسڑیلی حکومت سے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں کے حق میں آواز اٹھائیں۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔