سابق خاتون اول بیگم کلثوم نواز کی پہلی برسی

سابق خاتون اول بیگم کلثوم نواز کی پہلی برسی


لاہور(24نیوز) سابق خاتون اول بیگم کلثوم نوازکو دنیا سے رخصت ہوئے 1سال گزر گیا۔

بیگم کلثوم نواز نے یکم جولائی 1950ء کو اندورن لاہور کےکشمیری گھرانے میں آنکھ کھولی، میٹرک لیڈی گریفن اسکول،ایف ایس سی اور بی ایس سی کی ڈگری اسلامیہ کالج سے حاصل کی،ادب سے گہرا لگاؤ ہونے کے باعث انہوں نے 1972ء میں ایف سی کالج سے اردو لٹریچر میں بی اے کی ڈگری بھی حاصل کی۔اپریل 1971ء میں کلثوم بی بی نے نواز شریف کے ساتھ ازواجی زندگی کا آغاز کیا،،بیگم کلثوم نواز کے دو بیٹے حسن اور حسین نواز، جبکہ دو بیٹیاں مریم اور اسماء نواز ہیں۔

بیگم کلثوم نواز کو تین دفعہ خاتون اوّل ہونے کا اعزاز حاصل رہا جبکہ بارہ اکتوبر 1999 کو جب میاں نوازشریف کی حکومت کوجنرل پرویز مشرف نے ختم کرتے ہوئے مارشل لا لگایا تو اس وقت بیگم کلثوم نواز نے مسلم لیگ ن کی قیادت سنبھالی۔سابق وزیراعظم میاں نوازشریف جب پانامہ کیس میں نااہل ہوئے تو اس وقت ضمنی الیکشن کے لیے مسلم لیگ ن نے بیگم کلثوم نواز کو انتخابی میدان میں اتارا، بیگم کلثوم نواز کی انتخابی مہم کامیابی سے ان کی بیٹی مریم نواز نے چلائی۔

این اے ایک سوبیس کے ضمنی انتخابات میں کامیابی کے باوجود وہ حلف نہیں اٹھا سکیں، بیگم کلثوم نواز کو گلے کے سرطان کی تشخیص ہونے کے بعد علاج کی غرض سے لندن کے ایک نجی ہسپتال منتقل کر دیا گیا تھا اور طویل علالت کےبعد وہ 11 ستمبر 2018ء کو لندن میں انتقال کر گئیں، شوہرمیاں نوازشریف اور بیٹی مریم نواز کوان کےانتقال کی خبر اڈیالہ جیل میں دی گئی۔

بیگم کلثوم نواز ایک بہادر خاتون تھیں جنہوں نے آمریت کاڈٹ کر مقابلہ کیا،انکا نام سیاست کے میدان میں اہم کردار ادا کرنیوالی خواتین میں نمایاں رہے گا۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔