شام پر حملے کی تیاری،عالمی رہنماؤں نےآپسی رابطے تیز کردیے


24نیوز: امریکا اوربرطانیہ کی شام پر حملے کی دھمکی کے بعد عالمی منظر نامے پر افراتفری کا عالم، شامی تنازعہ پرعالمی رہنماؤں نےآپسی رابطے تیز کردیے۔

تفصیلات کے مطابق : امریکا اوربرطانیہ کی شام پر حملے کی دھمکی کے بعد عالمی منظر نامے پر افراتفری کا عالم ہے۔ شامی تنازعہ پرعالمی رہنماؤں نےآپسی رابطے تیز کردیے۔ غیر یقینی حالات کے پیش نظرصورتحال تشویشناک ہوتی جا رہی ہے۔   ذرائع کے مطابق شام پرآج رات فضائی حملے شروع کیے جاسکتے ہیں۔برطانوی آبدوزوں کوبھی الرٹ جاری کردیاگیا۔ برطانوی میڈیا نےخدشہ ظاہرکردیا۔آج ہنگامی طورپربلائے گئےکابینہ اجلاس میں برطانوی وزیراعظم حملوں کی منظوری لے سکتی ہیں۔

دوسری جانب ڈونلڈٹرمپ کے میزائل حملہ کی ٹویٹ پروائٹ ہاؤس نے واضح کیاکہ امریکی صدرنے بہت ساری آپشنزمیں سے صرف ایک آپشن کاذکرکیاہے۔ شامی صورتحال پرامریکی صدرٹرمپ کاترک ہم منصب طیب اردگان کے ساتھ رابطہ بھی ہوا۔وائٹ ہاوس سےجاری بیان میں کہا گیا کہ دونوں رہنماوں نے شامی تنازع پربات کرتےہوئےرابطے میں رہنے پراتفاق کیا۔

یہ بھی پڑھیں:کروڑ پتی لاہوریوں کے گرد گھیرا تنگ،ایف بی آر نے جال بچھادیا 

 علاوہ ازیں روس نے بھی خبردارکرتے ہوئے کہہ دیا کہ امریکی بحریہ پرگہری نظرہے۔روسی صدرپیوٹن کااسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہوسے ٹیلی فونک رابطہ بھی ہوا۔جس میں انہوں نے اسرائیل کوخبردارکیاکہ اسرائیل شام کی صورتحال کومزیدغیرمستحکم کرنے والاکوئی اقدام نہ کرے۔جبکہ ایرانی سپریم لیڈرکے مشیرنے بھی شامی وزیرخارجہ سے ملاقات میں ایرانی حمایت کایقین دلایاہے.سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کے مطابق امریکاکےممکنہ میزائل حملوں کے خدشہ پرشامی فورسزفوجی اورہوائی اڈے تیزی سے خالی کررہی ہیں۔