’’تاریخ نہیں حالات دیکھ کر فیصلہ کریں گے‘‘

’’تاریخ نہیں حالات دیکھ کر فیصلہ کریں گے‘‘


24نیوز : وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کہتے ہیں تاریخ نہیں حالات دیکھ کر فیصلہ کریں گے، ہم کشمیر پر کوئی جذباتی فیصلہ نہیں کریں گے، اقوام متحدہ میں کشمیر کا مقدمہ دوبارہ اٹھانے کیلئے بہت محنت کرنا ہوگی۔

کشمیر ہاؤس مظفرآباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ  ہمیں کہا جاتا ہے کل بھوشن سے ملاقات کرائی جائے، مشعال ملک کی ان کے شوہر یاسین ملک سے ملاقات کیوں نہیں کرائی جاتی؟ کشمیر کے معاملے پر پوری قوم ایک ہیں، میرے ساتھ بیٹھے وزیراعظم آزاد کشمیر مسلم لیگ ن کے ہیں۔

  بلاول نے میرے ساتھ نماز عید ادا کی، یہ کشمیریوں سے اظہار یکجہتی نہیں تو اور کیا ہے؟ پاکستان کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑا ہے، مسئلہ کشمیر کو اُجاگر کر نے میں کامیابی سے آگے بڑھ رہے ہیں، مسئلہ کشمیر کو سلامتی کونسل میں پیش کرنے کی کوشش کررہے ہیں، مقبوضہ کشمیر پر سیکورٹی کونسل میں جانا سب سے اہم فیصلہ ہے۔

چین نے مکمل تعاون کا یقین دلایا، اقوام متحدہ میں دوبارہ کیس اٹھانے کیلئے محنت کرنا ہوگی، ہم نے جذبات سے فیصلے نہیں کرنے، حکومتیں جذبات نہیں تاریخ کو ذہن میں رکھ کر فیصلے کرتی ہیں۔

شازیہ بشیر

Content Writer