وزیراعظم کے سامنے خاتون وزیر کے ساتھ جنسی ہراسانی،ہنگامہ برپا ہوگیا

وزیراعظم کے سامنے خاتون وزیر کے ساتھ جنسی ہراسانی،ہنگامہ برپا ہوگیا


ویب ڈیسک:  بھارت میں جہاں عام عوام میں جنسی ہراسانی کے واقعات میں روز بروز اضافہ ہوتا جارہا ہے وہیں بھارتی وزیر بھی پیچھے نہ رہا اور اپنی ہی ساتھی وزیر کو سب کے سامنے ہی نامناسب انداز میں چھوتا رہا ۔

 بھارت کی مشرقی ریاست تریپورہ کے دارالحکومت اگرتلا میں تقریب کے موقع پر بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے سامنے ریاستی وزیر منوج کانتی ڈیب نے ساتھی خاتون وزیرسنتا چکما کو نامناسب انداز میں چھوہا۔ منوج کانتی نے خاتون وزیر کی پیٹھ پر ہاتھ رکھا جس پر خاتون نے اپنے ہاتھ سے اس کا ہاتھ اپنی پیٹھ سے دور کیا تاہم منوج پھر بھی باز نہ آیا اور نامناسب انداز میں خاتون کے پیچھے کھڑا ہوگیا۔

ضرور پڑھیں:کھراسچ، 18 جون 2019

اس سارے منظر پر نہ تو وزیراعظم نریندر مودی نے ایکشن لیا اور نہ ہی متاثرہ خاتون کی جانب سے کوئی ردِ عمل آیا ہے تاہم ان کے ساتھ ہونے والے اس واقعے پر دیگر افراد نے آواز اٹھائی، حزب اختلاف کی جماعتوں اور خواتین نے وزیر کے نامناسب رویے پر مظاہرہ بھی کیا اور انہیں وزارت سے ہٹانےکا مطالبہ بھی کر دیا ہے۔

ان دونوں وزیروں کا تعلق بھارتی جنتا پارٹی(بے جی پی) سے ہے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔