کراچی :سکول چوکیدار کی بچی سے زیادتی کی کوشش،بلاول،وزیر اعلیٰ سندھ نے نوٹس لے لیا

کراچی :سکول چوکیدار کی بچی سے زیادتی کی کوشش،بلاول،وزیر اعلیٰ سندھ نے نوٹس لے لیا


کراچی (24نیوز) کراچی کے علاقے ابراہیم حیدر میں سکول کے رکھوالے کی جانب سے بچی کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کا واقعہ سامنے آیا ہے،مشتعل افراد نے سکول پر دھاوا بول دیا اورسکول میں توڑ پھوڑ کی گئی، چوکیدار کی حوالگی کا مطالبہ کیا گیا،بچی کے والد نے زیادتی کے واقعے سے انکار کردیا ہے جبکہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری سمیت وزیرِ اعلیٰ سندھ نے معاملے کا نوٹس لے لیا ہے ۔
تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ابراہیم حیدری کے نجی اسکول میں گذشتہ روز مبینہ طور پر اسکول کے چوکیدار نے پانچ سالہ بچی کے ساتھ مبینہ طور پر زیادتی کی کوشش کی ،بچے کے والدین اور اہلِ محلہ ، سکول پہنچے اور چوکیدار کی حوالگی کا مطالبہ کیا،، چوکیدار تک رسائی نہ ملنے پر اہلِ محلہ ہوئے مشتعل اور اسکول پر دھاوا بول دیا،پولیس نے ملزم کو حراست میں لے کر تھانے منتقل کردیا،اس دوران اسکول انتظامیہ اور والدین نے زیادتی کے واقعے سے انکار کردیا ہے۔
ادھر چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری سمیت وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ اور وزیر داخلہ سندھ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے واقعے میں ملوث ملزم کے خلاف سخت کارروائی کا حکم دے دیا ہے۔

ترجمان وزیر اعلیٰ سندھ کے مطابق مراد علی شاہ کی خصوصی ہدایات پر بچوں سے زیادتی کے واقعات کے حوالے سے خصوصی ڈیسک قائم کر دیا ہے ۔ خصوصی ڈیسک وزیراعلیٰ ہاوس کے شکایتی سیل میں قائم کیا گیا ہے۔ اس خصوصی ڈیسک پر بچوں سے زیادتی کے حوالے سے  24 گھنٹے شکایات وصول کی جائیں گی۔ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے محکمہ تعلیم کو بچوں سے زیادتی کے واقعات کی روک تھام کے لئے خصوصی اقدامات اٹھانے کی ہدایت کی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ تمام اسکولزبچوں کی حفاظت کے لیے خصوصی اقدامات کریں۔