کراچی : پانچ سالہ بچی کے ساتھ زیادتی کی کوشش کا معاملہ سندھ اسمبلی تک آگیا

کراچی : پانچ سالہ بچی کے ساتھ زیادتی کی کوشش کا معاملہ سندھ اسمبلی تک آگیا


کراچی (24نیوز) کراچی کے علاقے ابراہیم حیدری میں پانچ سالہ بچی کے ساتھ زیادتی کی کوشش کا معامل سندھ اسمبلی تک آگیا،وزیرِ اعلیٰ سندھ کی معاونِ خصوصی ارم خالد کا کہنا ہے کہ ابراہیم حیدری اسکول کا چوکیدارحراست میں ہے ، تفتیش کے بعد اسے کڑی سزا دلوائی جائے گی۔
تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی کے اجلاس میں ابراہیم حیدری میں بچی کے ساتھ زیادتی کی کوشش پر اراکین کی جانب سے مذمت کی گئی ،رکنِ سندھ اسمبلی اور وزیرِ اعلیٰ سندھ کی معاونِ خصوصی ارم خالد نے ایوان کو آگاہی دی کہ ابراہیم حیدری کی بچی کے ساتھ زیادتی کی تصدیق ہوئی ہے، بچی کا معائینہ کیا جارہا ہے۔
مسلم لیگ فنکشنل کی رکن نصرت سحر عباسی نے سندھ میں بچوں کے لاپتہ ہونے سے متعلق توجہ دلاو نوٹس پیش کیا ،حکومتی رکن شمیم ممتاز نے کہا کہ لاپتہ بچوں کی بازیابی کے لئے حکومت سنجیدگی سے کام کررہی ہے۔
اس دوران پی ٹی آئی کے خرم شیرزمان نے حکومتی ایم پی ایز کو فنڈز فراہم کرنے سے متعلق تحریک استحقاق ایوان میں پیش کی،، صوبائی وزیرہزار خان بجارانی نے تحریک استحقاق کی مخالفت کردی،، نثار کھوڑو نے کہا کہ بجٹ میں کوئی ایم پی ایز فنڈز نہیں رکھے گئے ہیں۔اس دوران گورنرسندھ کی جانب سے چھ سرکاری بلز کی منظوری کا بھی ایوان میں اعلان کیا گیا۔