انسانیت کی عظیم مثال، سزائے موت کے قیدی کی 18 سال بعد رہائی

انسانیت کی عظیم مثال، سزائے موت کے قیدی کی 18 سال بعد رہائی


گوجرانوالہ (24 نیوز) زندہ دلوں کے شہر کے ہمسایہ شہر میں انسانیت کی عظیم مثال قائم، سنٹرل جیل میں بند سزائے موت کے قیدی کی 18 سال بعد رہائی، عبدالستار سجدہ شکر بجا لانے مصروف رہا۔

تفصیلات کے مطابق عبدالستار ولد حشمت علی کو 18 سال قبل ایک مقدمہ میں موت کی سزا سنائی گئی۔ سزائے موت کے اس قیدی سے جڑی داستان ہر انسان کے لیے اہم سبق رکھتی ہے۔ عبدالستار کی بیٹی کی شادی جیل حکام نے خود کرائی اور باقاعدہ رخصتی کا اہتمام بھی کرایا۔

عبدالستار سے متعلق خبر سوشل میڈٰیا پر بہت مقبول ہوئی۔ ان کے کردار اور اچھائی سے متاثر ہو کر مدعیوں نے ان کو معاف کر دیا جس کے بعد ان کو 18سال کا عرصہ جیل میں گزارنے کے بعد رہائی مل گئی۔

رہائی حاصل کرنے کے بعد عبدالستار کا کہنا تھا کہ میں اللہ تعالیٰ کا شکر گزار ہوں اور باقی قیدیوں کے لیے دعا گو ہوں۔