آبروئے غزل احمد فراز کی آج 88ویں سالگرہ

آبروئے غزل احمد فراز کی آج 88ویں سالگرہ


لاہور(24 نیوز) شاعری کے میدان میں منفرد مقام حاصل کرنے والے برصغیر پاک و ہند کے ممتاز شاعر احمد فراز کی آج 88ویں سالگرہ منائی جارہی ہے، احمد فراز نے ہمیشہ جمہوریت کی حمایت کی۔

آبروئے غزل احمد فراز12 جنوری 1931ء کو کوہاٹ میں پیدا ہوئے،وہ آنکھ سے تو دور ہوگئے لیکن دل سے نہیں اترے،احمدفراز نے آخری سانسوں تک دنیائے شعروادب پر راج کیا،ان کے ہم عصر انہیں اردو غزل اور مزاحمتی ادب کے حوالے سے بڑے مقام پر فائز کرتے ہیں۔ فرازنےمحبت کے لازوال جذبے کو نغموں میں ڈھال کر تصویر یار کے پیکرتراشے'محبوبیت کی ادا اور عشق کی انا کے سہارے'ہجر و وصال کے موسموں کو لفظوں کے قالب میں ڈھالا۔

ان کےصاحبزدے سرمد فراز کہتے ہیں کہ احمد فراز کومل جذبوں کی شاعری اور عوامی حقوق کی جدوجہد کرنے کے ساتھ ساتھ شفیق باپ بھی تھے۔ احمد فراز کی شاعری میں غم جاناں اور غم دوراں ہی نہیں'وہ تو ظلم وجبراور آمریت پر بھی ٹوٹ کر برسے، جنرل ضیاالحق کے دور میں قید ہوئے جبکہ 6 سالہ خود ساختہ جلاوطنی بھی کاٹی۔