امریکی صدر ٹرمپ نے یوٹرن لے لیا

امریکی صدر ٹرمپ نے یوٹرن لے لیا


واشنگٹن(24نیوز) امریکا کے صدر ٹرمپ نے ہنگامی حالت نافذ کرنے کا منصوبہ فی الحال ترک کردیا، ججوں کی جانب سے مخالفت کے ڈر سے امریکی صدر نے ارادہ بدل لیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدرڈونلڈٹرمپ نے ہنگامی حالت نافذ کرنے کا منصوبہ فی الحال ترک کر دیا ، گزشتہ روزامریکی صدر نے جنوبی سرحدپردیوار بنانے کے لیے ہنگامی حالت نافذ کرنے کا عندیہ دیاتھا،  امریکی صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ میکسیو سرحد پر دیوار کی تعمیر انتہائی اہم ہے، لیکن یہ مسئلہ کانگریس ہی حل کرسکتی ہے، ان کا کہناتھاکہ ڈیموکریٹس دیوار کیلئے 5 لاکھ ڈالر دینا حماقت سمجھتے ہیں۔

امریکی میڈیا کا کہنا تھا کہ انہوں نےججوں کی جانب سے مخالفت کے ڈر سے ارادہ بدلا ہے، صدر ٹرمپ کے سخت موقف اور ڈیموکریٹس کے انکار سے 21 دن سے امریکا میں نظام حکومت جام ہوکررہ گیا ہے۔

قبل ازیں امریکی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے جمعہ کو ایک بیان میں کہا کہ امریکی فوج کی ترکی کے ساتھ فوجی شعبے، کردوں اور شام کے حوالے سے آئندہ ہفتے نتیجہ خیز بات چیت ہوگی،  ان کا کہنا تھا کہ امریکا ترکی کے ساتھ فوجی تعاون کے شعبے میں بات چیت جاری رکھنا چاہتا ہے، انہوں نے کہا صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور وزیر خارجہ مائیک پومپیو یہ سمجھتے ہیں کہ ترکی داعش کے خلاف جنگ جاری رکھنے اور کردوں کو نقصان نہ پہنچانے کا پابند ہے۔

 امریکا اور ترکی حلیف ہونے کے باوجود ایک دوسرے سے گہرے اختلافات بھی رکھتے ہیں،  ترکی شمالی اوقیانوس کے ممالک کے فوجی اتحاد نیٹو کا رکن ہے اور امریکا بھی اس اتحاد کا حلیف ہے، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے حال ہی میں شام سے اپنی فوجیں نکالنے کا اعلان کیا جس کے بعد مشرقی شام میں موجود 2000امریکی فوجیوں کی واپسی کی تیاری شروع کردی گئی ہے، مشرقی شام سے امریکی فوج کی واپسی ترکی کے فوجی تعاون کے مرہون منت ہے۔