میو ہسپتال جرائم کنڑول کرنے میں ناکام ہو گیا


لاہور ( 24نیوز )   میو ہسپتال جرائم کنڑول کرنے میں ناکام، انتظامیہ نے اپنی مدد آپ کے تحت منشیات فروش گروہ گرفتار کر لیا۔

24نیوز   ذرائع کے مطابق چوکی پولیس باربار کالز کرنے کے باوجود بھی حرکت میں نہ آئی۔ جرائم سے تنگ ہسپتال انتظامیہ بالآخر خود ہی حرکت میں آگئی۔ ڈی ایم ایس ایڈمن ڈاکٹر سعد بٹ کی سربراہی میں منشیات فروشوں کے گروہ کو گرفتار کر لیا گیا۔ہسپتال گارڈز نے ملزمان کے قبضے سے ہیروئین،چرس، بلیڈ اور نقدی بھی برآمد کرلی۔

 یہ بھی پڑھیں:دنیا میں 29 اقسام کا کینسر پایا جاتا ہے, نئی تحقیق نے بھونچال برپا کر دیا

دوسری جانب ایف آئی اے نے گردوں کی غیر قانونی پیوندکاری کے بعد بھارتی ڈاکٹروں کے ساتھ مل کر جگر کی غیر قانونی پیوندکاری کرنے والا گروہ پکڑلیا۔

لاہور کے دیہاتی علاقوں میں متعدد افراد کے جگر کی غیر قانونی پیوندکاری کے انکشاف کے بعد ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اےجمیل احمد خان میو نے اپنے دفتر میں میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ ایف آئی اے نے ہوٹا پنجاب کی ٹیم کے ساتھ شادمان میں کارروائی کی۔ جہاں ڈاکٹر طارق عزیز کے کلینک سے ایک ایجنٹ علی کو گرفتار کیا گیا۔ جو ڈاکٹر طارق عزیز اور دہلی سے ڈاکٹر پرکاش کے لیے سادہ لوح لوگوں کو جگر بیچنے پر مجبور کرتا اور دو سے تین لاکھ روپے ڈونر کو دینے کا جھانسہ دیتا تھا۔