پولیس کا میاں بیوی پر بہیمانہ تشدد، ویڈیو وائرل



کراچی(24نیوز) احکامات کے باوجود پولیس تشدد سے باز نہ آئی ،ساحل سمندر پر آنے والے میاں بیوی  کوبہیمانہ تشدد کا نشانہ بناڈالا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی ساحل سمندر کی سیر کے لئے آنے والے میاں بیوی پر پولیس نے تشدد کرتے ہوئے ان کو برا بھلا بھی کہا، ایڈیشنل آئی جی کی جانب سے پولیس کو احکامات جاری کئے گئے تھے کہ وہ سی ویو پر آنے والے افراد خصوصا خواتین کو ہراساں نہ کریں، مگر سی ویو پر چار اہلکاروں نے حکم عدولی کرتے ہوئےساحل سمندر پر آنے والے میاں بیوی کو تشدد کا نشانہ بنایا، جب شہریوں کی جانب سے ویڈیو بنانے جانے لگی تو ان پر بھی تشدد کیا، متاثرہ شخص کاکہناتھاکہ ہم دونوں میاں بیوی ہیں لیکن پولیس نے ایک نہ سنی اور ان کو مارتے رہی۔

واقعہ کے بعد ایڈیشنل آئی جی نےفورا ایکشن لیتے ہوئےچار اہلکاروں کو برطرف کیا اور دو کوگرفتار کرلیا، گرفتار ہونے والوں میں پولیس کانسٹیبل احمد خان اور اے ایس آئی ذوالفقار شامل ہیں،ایس ایس پی ساؤتھ پیر محمد شاہ نے میڈیا کو بتایا کے یہ اہلکار کرمنل ہیں، پولیس کو بدنام کررہے ہیں، گینگ بناکر اہلکار رشوت و بھتہ بٹور رہے تھے۔

ایس ایس پی نے مزید بتایا کہ واقعے میں ملوث ایک اہلکار زاہد فرار ہے، اہلکار قربان جو واقعے میں تو ملوث نہیں تھا، لیکن وہ بھی اسی گینگ کا حصہ ہے،اگر متاثرہ جوڑے کی جانب سے ایف آئی آر درج نہ بھی کرائی گئی تو ان تمام اہلکاروں کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی عمل لائے جائے گی۔

ذرائع کاکہناتھاکہ ساحل سمندر پر سیر کے لئے آنے والے میاں بیوی سے اہلکار نکاح نامہ طلب کر رہے تھے جس پر انہوں نے بتایا کہ ہم میاں بیوی ہیں لیکن اس کے باوجود پولیس اہلکاروں نے ایک نہ سنی اور ان پر تشدد شروع کردیا، پاس کھڑے دیگر شہری جو ان کی ویڈیو بنانا چاہتے تھےان کو بھی مارا۔