پڑھو پنجاب بڑھو پنجاب کا جنازہ نکل گیا

 پڑھو پنجاب بڑھو پنجاب کا جنازہ نکل گیا


وزیرآباد (24نیوز) وزیرآباد کے  نواحی گاوں سنیاریانوالا میں سرکاری سکول اپنی عمارت کو ہی ترس گیا۔بچے مسجد اور درختوں کےنیچے پڑھنے پرمجبورہیں۔رکن اسمبلی شوکت منظورچیمہ اسکول کوجگہ دیکرچپ ہوگئے۔

  وزیرآباد کےعلاقہ سنیاریانوالا میں سرکاری اسکول کے ننھے منھے بچے جولیگی ایم پی اے شوکت منظور چیمہ کے ماڈل گاؤں سے صرف ایک کلو میٹر دوری پر واقع ہے ۔ بچے کبھی مسجد،کبھی کسی کے گھرتوکبھی درخت کےنیچے بیٹھ کراپنا مستقبل سنوارنے کے جتن کررہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: گرمیوں کی چھٹیاں؛ محکمہ تعلیم پنجاب، پرائیویٹ سکولز آمنے سامنے

ضرور پڑھیں:انکشاف 16 جون 2019

لیگی ایم پی اے شوکت منظورچیمہ نے تین سال قبل دو کنال اراضی پراسکول کی بنیاد تو رکھ دی لیکن آج تک پھرچار دیواری بنی نہ ہی بچوں کے بیٹھنے کے لئے کوئی کمرہ بنا۔ ننھے بچے سردی اور گرمی کی صعوبتیں برداشت کرنے کے باوجود تین سال سے دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں۔بچے اوراساتذہ اپنی جگہ پریشان جبکہ والدین ننھے بچوں کو شدید سردی اور گرمی میں پڑھانے پر مجبور ہیں۔

ایم پی اے نے ملحقہ گاوں ہونے کے باوجود اپنی آنکھیں بند کررکھی ہیں۔موسم کی صعوبتیں برداشت کرنے کے باوجود سکول کی تعداد ایک سو دس بچوں کے قریب ہے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔