چیف جسٹس کے الیکٹرک پر برہم،بڑا حکم دیدیا


کراچی( 24نیوز ) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کے الیکٹرک پر برہم ،، عدالتِ عظمیٰ نے کے الیکٹرک سے 20 مئی تک وضاحت طلب کرلی،،غیر معیاری دودھ کی فروخت کے معاملے عدالت نے کمیشن کو جانچ جاری رکھنے کا حکم دیا۔
چیف جسٹس آف پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ روز دیکھتا ہوں کراچی کے شہری بلبلا رہے ہیں، فالٹ آگیا تو بیک اپ ہونا چاہیے, کے الیکٹرک کے سی ای او نے کہا کہ 18 یونٹس میں سے 2 یونٹس میں مسئلہ ہوا ،دو ہفتوں میں مطلوبہ پرزے باہر سے آجائیں گے, 3200 میگا واٹ ضرورت جبکہ 2650 بنا رہے ہیں۔

 یہ بھی پڑھیں:12مئی2007ءتاریخ میں خون آشام دن، ذمہ دار کون؟ چیف جسٹس نے کیس کی فائل طلب کرلی

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ 17 مئی سے رمضان المبارک آرہا ہے،کراچی والے تو شدید گرمی میں مارے جائیں گے,یہ مجرمانہ غفلت ہے،کیوں نہ آپ کے خلاف کارروائی کی جائے؟
کے الیکٹرک کے سی ای او نے کہا کہ کچھ علاقوں میں لوڈ شیڈنگ کا شیڈول ہے, چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ کیا لوڈ شیڈنگ بھی اپنی مرضی سے کرتے ہیں,لوڈ شیڈنگ کی اجازت کون سی اتھارٹی سے لیتے ہیں, 20مئی تک تمام سورتحال سے آگاہ کریں،دوسری جانب ڈبوں کے غیر معیاری دودھ کی فروخت کے معاملے میں عدالت نے کمیشن کو مختلف کمپنیوں کے دودھ کی جانچ جاری رکھنے کا حکم دے دیا۔