ن لیگ کو کیا معلوم وفاقی حکومت کیا ہوتی ہے: بلاول بھٹو


کراچی (24نیوز) چئیر میں پیپلز پارٹی بلاول بھٹوزرداری  کاکہنا ہے کہ  کراچی والے عمران خان کی صورت میں دوسرا بانی ایم کیو ایم نہیں برداشت کریں گے، 12 مئی 2017 والے  خونریزی سانحہ کا زمہ دارمیئر کراچی وسیم اختر کو دے دیا۔

کراچی باغ جناح میں جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے چئیر میں پیپلز پارٹی بلاول بھٹوزرداری نے کہا کہ مئی 2007 کو مشرف کے حواریوں نے ہمارے کارکن شہید کیے، ایک  سال کے بعد مشرف کے دوسرے حواریوں نے ہم پر ایک بار پھر حملہ کیا ہے۔ چئیر میں پیپلز پارٹی بلاول بھٹوزرداری کہتے ہیں ن لیگ کو کیا معلوم وفاقی حکومت کیا ہوتی ہے، وہ سمجھتے ہیں وفاق کا مطلب صرف اسلام آباد ہے، ناکام لیگ کیا جانے کہ وفاقی حکومت کیا ہوتی ہے۔

 انہوں نے عمران خان کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ عمران خان پہلے نیا پاکستان کا منجن بیچتے رہے، اب دو نہیں ایک پاکستان کا راگ الاپ رہے ہیں، عمران خان نے لوگوں کو ورغلانے کی کوشش کی، پشاور میں سرکاری اسپتال بن سکا نہ یونیورسٹی۔بلاول بھٹو نے کہا آزاد عدلیہ کی جدوجہد میں ہمارے کارکن شہید ہوئے، شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے حکیم سعید گراؤنڈ میں جلسے کا اعلان کیا، پی ٹی آئی ایک اور ایم کیو ایم ہے۔

مئی 2007 کو مشرف کے حواریوں نے ہمارے 12 کارکن شہید کیے، سال بعد مشرف کے دوسرے حواریوں نے ہم پر ایک بار پھر حملہ کیا۔ ڈکٹر قہقہےلگا رہا تھا کراچی میں لاشیں گر رہی تھیں، چئیر میں پیپلز پارٹی نے کہا کہ میری عمر پر نہ جائیں میں 3 نسلوں کی کامیابیوں اور قربانیوں کا نچوڑ ہوں، میرے جلسے سے ایم کیو ایم کےدھڑے ایک ہو گئے۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ میں چاہتا ہوں کراچی کے ہر ضلع میں یونیورسٹی ہو، چائنہ کٹنگ کے نام پر لوگوں سے میدان چھین لیے گئے، کراچی کی صنعت کو پھر سے ترقی دیں گے،بلاول بھٹو نے کہا کہ اب کسی کے دھوکے میں نہ آنا، کراچی کا ہر مسئلہ میرا ہے، کیونکہ کراچی میرا ہے۔ کراچی والو اب کسی دھوکے میں نہ آنا، اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا وقت آ گیا۔ یہ بلاول تمہارا ہے، پیپلزپارٹی تمہاری ہے۔