نواز شریف ریفرنسز:سپریم کورٹ نے احتساب عدالت کو مہلت دیدی



اسلام آباد( 24نیوز ) سپریم کورٹ آف پاکستان نے احتساب عدالت کو سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنسز کا ٹرائل مکمل کرنے کے لیے 17 نومبر تک کی مہلت دے دی۔

یاد رہے کہ نواز شریف کے خلاف 2 نیب ریفرنسز کا ٹرائل مکمل کرنے کے لیے سپریم کورٹ کی جانب سے احتساب عدالت کو دی جانے والی آخری مدت 7 اکتوبر کو مکمل ہوئی تھی، جس کے بعد احتساب عدالت نمبر 2 کے جج ارشد ملک نے سپریم کورٹ کو ٹرائل کی مدت میں توسیع کے لیے خط لکھا تھا۔

العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت پیر تک ملتوی

دوسری جانب احتساب عدالت اسلام آباد میں فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت جج محمدارشد ملک نے کی۔ دوران سماعت سابق وزیر اعظم نواز شریف عدالت میں پیش ہوئے، نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث کی سپریم کورٹ میں موجودگی کے باعث معاون وکیل نے کہا کہ چاہتے ہیں خواجہ صاحب کی موجودگی میں واجد ضیاء کا بیان قلمبند کیا جائے، جبکہ استغاثہ نے موقف اپنایا کہ پراسیکیوٹر نیب سپریم کورٹ میں مصروف ہیں، شواہد مکمل ہونے سے متعلق حتمی طور پر وہ خود عدالت کو آگاہ کریں گے، عدالت نے فلیگ شپ اور العزیزیہ ریفرنسز کی سماعت پیر تک ملتوی کر دی۔

دوسری جانب نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے العزیزیہ سٹیل مل ریفرنس میں درخواست دائر کی گئی۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ العزیزیہ سٹیل مل ریفرنس کے تفتیشی افسر محبوب عالم سے کچھ سوالات مزید کرنے ہیں۔ عدالت مزید سوالات کرنے کی اجازت دے۔ عدالت کی جانب سے درخواست پر دلائل کیلئے نیب کو پیر کیلئے نوٹس جاری کر دیا گیا، عدالت نے فلیگ شپ ریفرنس میں پیر کو واجد ضیاءکو بھی طلب کر لیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer