پاکستانی خاتون کے ہاتھوں کڑھائی شدہ قرآن پاک مدینہ لائبریری کی زینت

پاکستانی خاتون کے ہاتھوں کڑھائی شدہ قرآن پاک مدینہ لائبریری کی زینت


گجرا ت(24 نیوز)  62سالہ خاتون کا کپڑے پرہاتھوں کی کڑھائی کے ذریعے تیاکردہ قرآن پاک کا نسخہ مدینہ منورہ کے قرآن پاک کے نسخہ جات جمع کرنے والی ”قرآن ایگزی بیش“ لائبریری پہنچ گیا.

تفصیلات کے مطابق گجرات محلہ گڑھی احمد آباد کی رہائشی خاتون نسیم اختر کو  اپنے ہاتھوں سے قرآن لائبریری رکھنے کے دیرینہ خواب کو تعبیرملی تو انکی خوشی دیدنی تھی،  نسیم اختر اور اسکے بیٹے محمد اقبال حج کے دوران قرآن پاک کی تین پاروں پر مشتمل ایک جلد ہمراہ لیکر سعودی عرب پہنچے اور مدینہ منورہ میں قائم قرآن ایگزی بیشن( معرض القرآن) لابئریری میں قدیمی قرآن پاک کے نسخہ جات کیساتھ رکھنے کیلئے مدینہ شریف کے امام و قاضی سے رجو ع کیا، جن کی اجازت کے بعد نسیم اختر اور انکے بیٹے نے اپنے ہاتھوں سے قرآن پاک کا نسخہ معرض القرآن کی انتظامیہ کے حوالے کیا جبکہ باقی 27پاروں کی جلدیں وہ آئندہ عمرہ ادائیگی کے دوران رکھیں گی۔

نسیم اختر اور اسکے بیٹے کو شاہی مہمانوں کی طرح سلوک کیا گیا اور نسیم بی بی وہیل چیئر پر انہیں لائبریری لےجایا گیا جہاں پر قاری نے انہیں کے پارے سے تلاوت کی،  یاد رہے کہ 62سالہ نسیم اختر نے اپنے ہاتھ سے خوبصورت انداز سوئی دھاگے کی مدد سے کپڑے پر قرآن پاک کا خوبصورت نسخہ لکھ کردین اسلام اور آخری الہامی کتاب سے والہانہ محبت کا منفرد عملی نمونہ پیش کیا ۔ انہوں نے 1987ءمیں قرآن پاک کے اس نسخہ پر کام شروع کیا اور32سال کی طویل محنت کے بعد مارچ 2018ءمیں اسے مکمل کیا اس نسخے کی تکمیل کیلئے 300گز کا سفید رنگ کا کپڑا ، کالے اور گلابی رنگ کے80ڈبہ دھاگہ، 22ڈبے پوائنٹر اور 25گز پیپر پٹی کا استعمال کیا گیا ۔

خوبصورتی کا شاہکار یہ قرآن پاک 10جلدپر مشتمل ہے،  جسکی ہر جلد میں تین تین سپارے ہیں اورہر جلد کی لمبائی 22انچ اور چوڑائی 15انچ پر مشتمل ہے جبکہ مجموعی وزن 55کلو ہے۔  نسیم اختر قرآن پاک کا نسخہ مدینہ منور ہ میں اپنے ہاتھوں رکھنے پر بے حد خوش ہیں اور  اسے اللہ کا خاص کرم قرار دے دیتی ہیں۔