نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن (ر)محمد صفدر کی پیرول رہائی میں چار دن توسیع

11:32 AM, 12 Sep, 2018

Read more!

راولپنڈی ( 24نیوز )سابق وزیر اعظم نواز شریف،مریم نواز،کیپٹن ریٹائرڈ محمدصفدر کو اڈیالہ جیل سے بارہ گھنٹے کے لیے پیرول پر رہا کر دیا گیا۔
بیگم کلثوم نواز کی آخری رسومات میں شرکت کے لیے نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو پیرول پر رہا کیا گیا،تینوں کی رہائی ابتدائی طور پر بارہ گھنٹے کےلئے ہوئی۔
نواز شریف،مریم نواز،کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو نور خان ایئر بیس سے خصوصی طیارے پر لاہور لایا گیاجہاں سے وہ سخت سکیورٹی میں جاتی امرا پہنچے،تینوں کو جاتی امرا ءسے باہر جانے کی اجازت نہیں ہو گی،اڈیالہ جیل کا عملہ نگرانی کے لیے ہمراہ ہے،محکمہ داخلہ پنجاب کا خصوصی عملہ بھی تعینات ہو گا۔


پنجاب کابینہ کی مشاورت سے پیرول پر رہائی کی مدت میں اضافہ بھی کیا جا سکتا ہے،سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے ہوم سیکرٹری سے پانچ دن کی رہائی کے لیے درخواست کی تھی۔

محکمہ داخلہ پنجاب کے مطابق نوازشریف،مریم اور محمد صفدر کی پیرول پر رہائی میں مزیدچار دن اضافے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کی سمری وزیراعلیٰ پنجاب کو ارسال کردی گئی ہے، پیرول کا دورانیہ پانچ دن کردیا گیا ہے۔ترجمان محکمہ داخلہ نے بتایا کہ کلثوم نواز کی میت پاکستان آنے میں کسی تاخیر پر پیرول میں مزید اضافہ کردیا جائے گا جب کہ پیرول کی بڑھائی جانے والی مدت آج رات 12 بجے سے شروع ہوگی۔محکمہ داخلہ پنجاب نے جاتی امرا کو سب جیل قرار دیئے جانے کی اطلاعات کی بھی تردید کردی۔

خیال رہے سابق وزیر اعلیٰ شہباز شریف پیرول پر رہائی کی درخواست پر خود دستخط کیے تھے،نواز شریف اور مریم نواز نے ایسا کرنے سے انکار کردیا تھا،شہباز شریف مریم نواز کو گھنٹوں منتیں کرتے رہے کہ مریم دستخط کردو ورنہ والدہ کا آخری دیدار بھی نہیں کرسکو گی،مریم نواز کے نہ ماننے پر شہباز شریف نے یہ کام خود کردیا تھا۔
یاد رہے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی اہلیہ،مریم نواز کی والدہ اور کیپٹن ریٹائرڈ محمدصفدرکی ساس لندن میں طویل علالت کے بعد انتقال کرگئی تھیں جن کو جمعہ کے روز جاتی امراءمیں نماز جنازہ کے بعد سپرد خاک کیا جائیگا۔

مزیدخبریں