جی ڈی اے نےآرٹیکل 149 کے نفاذ کی مخالفت کردی

جی ڈی اے نےآرٹیکل 149 کے نفاذ کی مخالفت کردی


اسلام آباد( 24نیوز ) جی ڈی اے نے آئین کے آرٹیکل 149 کے نفاذ کی مخالفت کردی، پیر پگارا نے کہا کہ بیریسٹر فروغ نسیم کو سوچ سمجھ کر بات کرنی چاہیئے تھی،وفاقی وزیر کو چاہیئے دارالحکومت کراچی واپس لانے کا مطالبہ کرے ۔

تفصیلات کے مطابق گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس( جی ڈی اے )نے آئین کے آرٹیکل 149 کے نفاذ کی مخالفت کردی، مسلم لیگ فنکشنل کے سربراہ پیر پگارا کا کہنا ہے کہ کراچی کو الگ کرنے کی بات سمجھ سے بالاتر اور ناقابل قبول ہے،جب پاکستان کا قیام عمل میں آیا تو کراچی دارالحکومت تھا۔

بھارت سے ہجرت کرکے آنے والوں کی اکثریت نے کراچی میں قیام کو ترجیح دی،اچانک دارالحکومت کراچی کواسلام آباد منتقل کردیا گیا، دارالحکومت کو منتقل کرنے سے خزانے سے اربوں روپئے خرچ ہوئے، کراچی سے دارالحکومت کو منتقل کرنے کی ضرورت نہیں تھی، کراچی کو الگ کرنے کی  بات ناقابل فہم اور ناقابل قبول ہے۔

ان کا مزید کہناتھا کہ حروں کا روحانی پیشوا اس وقت بھی سیکورٹی کے لحاظ سے کراچی زیادہ محفوظ ہے، بیریسٹر فروغ نسیم کو چاہیئے کے وہ دارالحکومت کراچی واپس لانے کا مطالبہ کرے، کراچی کو وفاق کے حوالے کرنے کی بات درست نہیں،اگر دارالحکومت کو اسلام آباد منتقل کردیا گیا تو دار الحکومت میں رہنے والوں کو کیوں منتقل نہیں کیا گیا۔

علاوہ ازیں پاک سرزمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضا ہارون نے بھی آرٹیکل 149 کی مخالفت کردی ہے،واضح رہے کہ وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم نے کراچی میں گندگی کی ابتر صورتحال کے پیش نظر وفاق کو تجویز پیش کی ہے کہ وہ کراچی کا انتظامی کنٹرول سنبھالے۔

پاکستان کے آئین کے آرٹیکل 149 کے تحت وفاقی حکومت کسی بھی صوبائی حکومت کو قومی اہمیت کے معاملے پر کوئی بھی ہدایات جاری کرسکتی ہے۔