ارکان سندھ اسمبلی بھی لوڈ شیڈنگ پر نالاں

ارکان سندھ اسمبلی بھی لوڈ شیڈنگ پر نالاں


کراچی(24نیوز) سندھ اسمبلی کے ارکان نے بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ پر اٹھائی جانے والی آواز کے باوجود جاری لوڈ شیڈنگ پر سخت تشویش کا اظہار کردیا ہے۔ بدمست وفاقی سرکار عوامی منتخب نمائندوں کی بھی سننے کو تیار نہیں ہو سکتا ہے اب وہ بھی عوام کے ساتھ سڑکوں پر آجائیں۔

کراچی میں سخت گرمی میں12 12 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ سے شہری دوہری اذیت کا شکارہوگئے۔ گرمی سے نڈھال شہریوں کوگھنٹوں لوڈ شیڈنگ سے پانی کی قلت کابھی سامناہے۔ جبکہ تجارتی مراکز میں کاروبار بھی ٹھپ ہوکر رہ گیا ہے۔آج صبح سے ہی درجہ حرارت ستائیس ڈگری سینٹی گریڈ پر سورج کاپارہ توٹھنڈا ہوگیا مگر باربارکی لوڈشیڈنگ نے عوام کا پارہ ہائی کردیا۔

یہ بھی پڑھیں:کراچی کے شہری دوہری مصیبت میں مبتلا
 
بجلی نہ ہونے کی وجہ سے گھروں میں پینے کاپانی بھی نایاب ہوچکا ہے۔ اورنگی ٹاون، کورنگی، لیاقت آباد،  سرجانی، نارتھ کراچی، گزری اورعشہر کے مختلف علاقوں میں ہر دوگھنٹے بعد چارگھنٹے توکہیں دن میں چاربار غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ سے شہری دوہرے عذاب کا شکارہیں۔ کراچی میں تکنیکی خرابی کے نام پرباربار بجلی کی بندش کا سلسلہ اب بھی جاری ہے۔تجارتی علاقوں میں بجلی کی بندش سے کاروباربھی ٹھپ ہوکر رہ گیا۔ جبکہ صنعتی علاقوں میں بارہ سے پندرہ گھنٹے بجلی کی لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے۔