93ارب سے زائد کے نئے نوٹ جاری، مجموعی حجم تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا

93ارب سے زائد کے نئے نوٹ جاری، مجموعی حجم تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا


24نیوز: بے تحاشا نئے نوٹ چھاپنے کی وجہ سے ملک میں زیر گردش نوٹ 43 کھرب 77 ارب روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئے۔ ایک ہفتے میں 93 ارب روپے سے زائد کے نئے نوٹ جاری کردیئے گئے۔

اے ٹی ایم مشینیں نئے نوٹ اگلنے لگیں۔ جیبوں، تجوریوں میں نوٹ ہی نوٹ مگر روپے کی قدر دن بدن گھٹتی اورمہنگائی بڑھتی ہی جا رہی ہے۔

اسٹیٹ بینک کی رپورٹ کے مطابق اپریل کے پہلے ہی ہفتے 93ارب 12کروڑ 61لاکھ کے نئے نوٹ چھاپے گئے۔ ملک میں جاری نوٹوں کی مجموعی مالیت ملکی تاریخ میں پہلی بار 43کھرب 78ارب 85لاکھ تک پہنچ گئی۔

یہ بھی پڑھیں:رواں مالی سال کا تجارتی خسارہ 31 ارب ڈالر کے قریب پہنچ گیا

 زیرگردش نوٹوں میں 93ارب 12کروڑ 30لاکھ کا اضافہ ہوا۔ جس سے زیرگردش نوٹوں کا مجموعی حجم 43کھرب 77ارب 86کروڑ 9لاکھ کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا۔

یہی نہیں حکومت نے مرکزی بینک سے 11کھرب 68ارب کے نئے قرضے بھی لئے۔ ن لیگ کی حکومت میں زیرگردش نوٹوں کی مجموعی مالیت میں 113فیصد اضافہ ہوچکا ہے۔