اب ٹوٹ گریں گی زنجیریں،اب زندانوں کی خیرنہیں,فیض احمدفیض کاآج یوم پیدائش


سیالکوٹ(24نیوز) اے خاک نشینوں اٹھ بیٹھووہ وقت قریب آپہنچا ہے،جب تخت گرائے جائیں گے جب تاج اچھالے جائیں گے،بیسویں صدی کے ترقی پسند،انقلابی، رومانوی شاعر فیض احمد فیض کا آج107واں یوم پیدائش ہے۔

تفصیلات کےمطابق فیض 13 فروری 1911 کو شاعر مشرق علامہ اقبال کے شہرسیالکوٹ میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے تدریسی مراحل اپنے آبائی شہر سیالکوٹ اور لاہور میں مکمل کیا۔ اپنے خیالات کی بنیاد پر 1936 میں ادبا کی ترقی پسند تحریک میں شامل ہوئے اوراسے بام عروج پر بھی پہنچایا۔ فیض انسانیت کے لئے ضمیر اور یقین کی ایک ایسی آواز بن چکے تھے جو کہ ظالم زمانے کے خلاف ڈٹ جانے کا درس دیتے تھے اور ان کی شاعری انقلاب کی ایک گرج بن چکی تھی۔

واضح رہے کہ فیض احمد فیض کے مقبول شاعری مجموعوں میں نقش فریادی، زندان نامہ، میرے دل میرے مسافر شامل ہیں اور ان کے تمام مجموعے نسخہ ہائے وفا کے نام سے شائع ہوچکے ہیں۔ ادیب فیض احمد کو دنیا سے بچھڑے 32 برس بیت گئے ہیں۔