پی آئی اے کا مالی بحران شدت اختیار کرگیا

پی آئی اے کا مالی بحران شدت اختیار کرگیا
City42 - PIA


اسلام آباد (24 نیوز) پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائن کا مالی بحران شدت اختیار کرگیا۔ پی آئی اے کے مجموعی نقصانات 414 ارب 30 کروڑ روپے تک پہنچ چکے ہیں۔ ایک کے بعد ایک بیل آؤٹ پیکج بھی حالت نہ بدل سکا۔

ذرائع کے مطابق قومی ائیر لائن کا مالی بحران بڑھتا جا رہا ہے۔ مجموعی نقصانات 414 ارب 30 کروڑ روپے تک پہنچ چکے ہیں۔ پی آئی اے کے ذمہ 247 ارب 70 کروڑ روپے کے قرضے واجب الادا ہیں جبکہ کل واجبات 144 ارب 70 کروڑ روپے تک پہنچ چکے ہیں۔

پی آئی اے کو ہر ماہ چار ار ب روپے کا قرضہ ادا کرنا ہے جبکہ سود کی مد میں ڈیڑھ ارب روپے ادا کرنے ہیں۔ پی آئی اے کے پاس کل 32 جہاز ہیں جن میں سے 20 لیز پر لیے گئے۔ تحریک انصاف کی حکومت پی آئی اے کو اب تک 22 ارب کے بیل آوٹ پیکج دے چکی ہے۔

پی آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ قومی ائیر لائن کو مالی بحران سے نکالنے کے لیے فوری طور پر 15 ارب کی ضرورت ہے۔ چیئرمین پی آئی اے ارشد خان کا کہنا ہے کہ خسارے میں جانیوالے روٹس کو بند کیا جا رہا ہے۔

صغراں افضل(ایڈیٹر)