سعودی ولی عہد کا استقبال، مصروفیات اور ممکنہ اہم معاہدے؟ رپورٹ پڑھیں



اسلام آباد(24نیوز) سعودی ولی عہد کی پاکستان آمدپرسیکورٹی اور دیگر انتظامات مکمل کرلیے گئے ہیں۔ ریڈ زون سیل کرکے پولیس اور رینجرز کےدو ہزار سے زائد اہلکاروں کو تعینات کیا جائے گا۔وزیراعظم انہیں خود گاڑی چلاکروزیراعظم ہاؤس لائیں گے، اکیس توپوں کی سلامی دی جائے گی۔دوسری جانب چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ کا کہنا ہے کہ پاکستان اورسعودی عرب کے درمیان 10سے15 ارب ڈالرز کے ایم اویوزہوں گے۔ توانائی منصوبوں کے لیے ایک ارب 30 کروڑ سعودی ریال فراہم کیے جائیں گے۔

سعودی ولی عہد کے استقبال کی تیاریاں مکمل

سب تیاریاں مکمل ہوگئیں۔شاہی مہمان کاشانداراستقبال کیاجائےگا۔ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو وزیراعظم ہاوس آمد پر گارڈ آف آنر اور 21 توپوں کی سلامی دی جائے گی جس کے بعدوزیراعظم عمران خان ولی عہد کے اعزاز میں ظہرانہ دیں گے۔ایوان صدر میں عشایہ دیا جائےگا۔دورے کے دوران سعودی ولی عہد صدر پاکستان وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ سے ملاقاتیں کریں گے۔

سعودی ولی عہد کےدورےپر سیکیورٹی، ٹریفک اور دیگر انتظامات بھی مکمل کرلیے گئےہیں۔2 روز کے لیے اسلام آباد اور راولپنڈی میں فضائی حدود بند، موبائل فون سروس جزوی طور پر معطل اور جڑواں شہروں میں ہیوی ٹریفک کا داخلہ بھی ممنوع ہوگا جبکہ پولیس اور رینجرزکےدو ہزار سے زائد اہلکار تعینات کیےجائیں گے۔

سعودی عرب رائل گارڈ کے 150 سے زائد اہلکار اورپاکستانی قانون نافذ کرنے والے ادارے مشترکہ سیکیورٹی ڈیوٹی سر انجام دیں گے۔اسی حوالے سےاسلام آباد پولیس اور سعودی رائل گارڈز نےریڈزون کامشترکہ دورہ بھی کیا۔سعودی رائل گارڈز نے ریڈ زون میں واقع مختلف ہوٹلز کا بھی جائزہ لیا۔

سعودی ولی عہد کےدورےکی تفصیلات بتاتےہوئےدفترخارجہ کاکہناہے سینٹ کا ایک وفد بھی سعودی ولی عہد سے ملاقات کرے گا۔وفد شامل سعودی وزرااپنے پاکستانی ہم منصب وزرا سے ملاقاتیں کریں گے۔ملاقاتوں میں دونوں ممالک کے درمیان درمیان باہمی تعاون کو مزید وسعت دینے اور مختلف شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے سے متعلق بات چیت کی جائیگی۔

پاکستان اورسعودی عرب میں10سے 15ارب ڈالرزکے ایم اویوزہوں گے

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کے دوران دونوں ممالک میں اہم معاہدوں اوریاداشتوں پر دستخط ہوں گے، چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ ہارون شریف کہتے ہیں کہ سعودی عرب سے10سے15 ارب ڈالرز کے معاہدے کیے جائیں گے۔ہارون شریف کے مطابق سعودی عرب کے ساتھ ریکوڈک منصوبے پر کوئی بات نہیں ہو رہی تاہم سعودی قیادت پاکستان سے لانگ ٹرم پارٹنرشپ کیلئے آرہی ہے،سعودی عرب ونڈ اور سولر منصوبوں میں سرمایہ کاری کرے گا۔

سعودی عرب پاکستان کو دیامر بھاشا اور مہمند ڈیم منصوبوں کے لئے فنڈز فراہم کرنے کا معاہدہ کرے گا،بجلی کے5 منصوبوں کیلئے1 ارب 20 کروڑ 75 لاکھ ریال کے ایم او یو پر دستخط ہونگے،دیامر بھاشا ڈیم کیلئے37 کروڑ 50 لاکھ سعودی ریال فراہم کئے جائیں گے، مہمند ڈیم کیلئے30 کروڑ،شونتر منصوبےکیلئے 24 کروڑ 75 لاکھ ریال ملیں گے جامشورو پاورپراجیکٹ کیلئے 15 کروڑ37 لاکھ ریال فراہم کئےجائیں گے جبکہ جاگران ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کیلئے 13 کروڑ 12 لاکھ ریال فراہم کئے جائیں گے۔

 وزرات اوورسیز نے بھی پلان تیار کرلیا

سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان کے حوالے سے وزرات اوورسیز نے بھی پلان تیار کرلیا ہے،ذرائع کا کہنا ہے وزرات اوورسیز  سعودی عرب میں پاکستانیوں کے مسائل ولی عہد کے سامنے اٹھائے گی، وزیراعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری پاکستانی لیبر کے مسائل سے سعودی وفد کو آگاہ کریں گے.ذرائع کے مطابق زلفی بخاری دیوالیہ سعودی کمپنیوں کے پاکستانی لیبر پر منفی اثرات سے آگاہ کریں گے.سعودی عرب میں تین ہزار سے زائد پاکستانیوں کی تنخواہ کی عدم ادائیگی کا معاملہ بھی اٹھایا جائے گا. زلفی بخاری کا کہنا ہےسعودی ولی عہد کے دورے سے پاکستان کا عالمی دنیا میں عزت اور مقام بڑھے گا، سعودی عرب میں پاکستانی لیبر کے مسائل حل ہونے کے ساتھ ساتھ کئی معاہدے ہوں گے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔