بنوں میں جے یو آئی (ف) کے اکرم درانی کے قافلہ پر دھماکہ، 4 افراد جاں بحق


بنوں(24نیوز)  جمعیت علمائے اسلام (ف) کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر اکرم خان درانی کے قافلے کے قریب بم حملے کے نتیجے میں 4 افراد جاں بحق اور 13 سے زائد زخمی ہوگئے، تاہم وہ خود اس واقعے میں محفوظ رہے۔

اکرم خان درانی قومی اسمبلی کے حلقے این اے 35 سے متحدہ مجلس عمل (ایم ایم اے)کے ٹکٹ پر پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے مدمقابل الیکشن لڑ رہے ہیں۔ پولیس کے مطابق اکرم خان درانی انتخابی جلسے میں شرکت کے لیے جارہے تھے کہ بنوں کے مضافاتی علاقہ حوید میں ان کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا۔واقعہ میں زخمی ہونے والوں میں پولیس اہل کار بھی شامل ہیں، جنہیں طبی امداد کے لیے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرز اسپتال بنوں منتقل کردیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: عوامی نیشنل پارٹی کی کارنر میٹنگ میں دھماکہ، ہارون بلور سمیت 20 افراد شہید

 ڈسٹرکٹ پولیس افسر (ڈی پی او) خرم رشید نے بم دھماکے میں اکرم خان درانی کے محفوظ ہونے کی تصدیق کی۔ریجنل پولیس آفیسر (آر پی او) بنوں کریم خان کے مطابق دھماکا اکرم خان درانی کے انتخابی جلسے سے 50 میٹر دور ہوا اور جلسہ گاہ کے اطراف 40کے قریب پولیس اہلکار تعینات تھے۔

اکرم خان درانی کا کہنا ہے پولیس کی جانب سے اچھی سیکورٹی دی گئی تھی۔جلسہ سے واپس آتے ہوئے دھماکا ہو گیا ۔انھوں نے کہا کہ زندگی اور موت اللہ کے ہاتھ  میں ہے۔ اللہ تعالیٰ کا شکر ہے کہ حملہ میں محفوظ رہا ۔ 

چیف الیکشن کمشنر سردار رضا نے اکرم درانی پر حملے کی شدید مذمت کی۔الیکشن کمیشن نے نگران صوبائی حکومت سے سابق وزیراعلی خیبرپختونخواہ اکرم درانی پر حملہ کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے تمام امیدواروں کو بلاامتیاز سیکورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کر دی۔الیکشن کمیشن نے ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا صوبائی حکومتیں انتخابات کے لیے ماحول کے لیے پرامن اور سازگار بنائیں جبکہ الیکشن کمیشن نے صوبائی حکومتوں سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ ہدایات کے باوجود امیدواروں کو سیکورٹی کا مناسب انتظام کیوں نہیں کیا گیا۔

ضرور پڑھیں:غداری سے بچ گئے

واضح رہے کہ   10 جولائی کو صوبائی دارالحکومت پشاور کے علاقہ  یکہ توت میں کارنر میٹنگ کے دوران خودکش حملے کے نتیجے میں پی کے 78 سے عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار ہارون بلور سمیت 22 افراد شہید جبکہ متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔