بریگزٹ ڈیل،برطانوی پارلیمنٹ نے فیصلہ سنادیا



لندن (24نیوز)برطانوی وزیراعظم ٹریزامے کو ایک بار پھر شکست کا سامنا،ایوان نمائندگان نے بھاری اکثریت سے بریگزٹ ڈیل مسترد کردی۔

جنوری کے بعد ایوان میں اراکین نے منگل کو اس معاہدے کو 242 کے مقابلے میں 391 ووٹ سے مسترد کیا۔وزیراعظم ٹریزامے کا کہنا ہے کہ اب اراکین پارلیمان اس بارے میں ووٹ ڈالیں گے کہ کیا برطانیہ کو معاہدے کے بغیر ہی 29 مارچ کو یورپی یونین سے نکل جانا چاہیے اور اگر اس میں بھی ناکامی ہوئی تو پھر سوال یہ ہو گا کہ کیا بریگزیٹ کو التوا میں ڈال دیا جائے۔

بریگزٹ ڈیل پر اراکینِ پارلیمان کی ووٹنگ سے پہلے برطانوی وزیرِ اعظم ٹریزا مے نے کہا کہ وہ اس ڈیل پر ’لازمی قانونی‘ تبدیلیوں کے حصول میں کامیاب رہی ہیں۔تاہم یورپی کمیشن کے صدر ژان کلاؤڈ جنکر نے متنبہ کیا تھا کہ اگر اس ڈیل کو ووٹنگ میں شکست ہوئی تو تیسرا موقع نہیں ملے گا۔آخری مرتبہ وزیر اعظم کی مجوزہ بریگزٹ ڈیل کو پارلیمان کے سامنے جنوری میں پیش کیا گیا تھا اور اس میں اسے 230 ووٹوں سے تاریخی شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

نو ڈیل بریگزٹ پر ووٹنگ کل ہوگی،ادھر اپوزیشن لیڈر جرمی کوربن نے ملک میں عام انتخابات کرانے کا مطالبہ کردیا ہے،کلبرطانوی پارلیمان میں منظور ہو جاتا ہے تو اس صورت میں برطانیہ بغیر کسی معاہدے کے یورپی اتحاد سے نکل جائے گا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer