قومی اسمبلی اجلاس:جنوبی پنجاب کے عوام کیلئے خوشخبری



اسلام آباد(24نیوز) قومی اسمبلی کا اجلاس پارلیمنٹ ہائوس میں جاری ہے،جس میں ارکان اسمبلی کی گرما گرم تقریریں جاری ہیں۔

 جنوبی صوبہ پنجاب بنانے کے لئے آئینی ترمیم بل پیش کرنے کی تحریک قومی اسمبلی میں منظور کرلی گئی، جنوبی صوبہ پنجاب بنانے کی تحریک مخدوم سید سمیع الحسن گیلانی نے پیش کی ،جنوبی پنجاب صوبہ بنانے پر اپوزیشن تقسیم ،مسلم لیگ ن نے جنوبی پنجاب صوبہ کی تحریک کی مخالفت کردی ۔تحریک انصاف اور پی پی پی جنوبی پنجاب صوبہ بنانے کی حامی مسلم لیگ ن کے ارکان نے نشستوں پر کھڑے ہوکر احتجاج کیا۔مسلم لیگ ن بہاولپور اور جنوبی پنجاب دو صوبے چاہتی ہے۔

 وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سی پیک اپنی تکمیل کو پہنچے گا کوئی کچھ بھی کرلے۔سی پیک بن کر رہے گا گوادر حملے میں جن اہلکاروں نے جام شہادت نوش کیا ان کو سلام پیش کرتے ہیں، سی پیک کے لئے خصوصی سکیورٹی ڈویژن بنایا ہے، سی پیک کی سیکیورٹی یقینی بنائی جائے گی، جنوبی پنجاب صوبہ پر پی پی پی اور تحریک انصاف ایک پیج پر ہیں، تحریک انصاف جنوبی پنجاب صوبہ بنانے کے اپنے منشور پر عمل کرکے رہے گی۔

وزیر توانائی عمر ایوب نے توجہ دلاؤ نوٹس پر کہا کہ  اسلام آباد کے مکینوں کو بجلی اور گیس کے نئے کنکشنز اور میٹروں پر پابندی کی وجہ سے مشکلات درپیش ہیں، او جی ڈی سی ایل نے پہلے کوٹہ تین لاکھ کا رکھا تھا، ابھی دوبارہ اپیل ہوئی ہے اور کوٹہ 6 لاکھ کرنے کی سفارش کی گئی ہے، اس چیز کو سپورٹ کرتی ہے کہ نئے کنکشنز دینے چاہئے۔

وفاقی وزیر توانائی عمرایوب نے کہا ہے کہ رمضان المبارک میں ملک کے کسی حصے میں سحر اورافطار کے وقت لوڈشیڈنگ نہیں ہورہی، وزیراعظم کی ہدایت کے مطابق سحر اورافطار میں بلاتعطل بجلی فراہم کی جارہی ہے ،سابق حکومت سے سوال ہےکہ اس کے دورمیں رمضان المبارک میں کیوں لوڈشیڈنگ ہوتی تھی ،عمران خان کی حکومت نے سسٹم کوشفاف بنایا ،چوری کے خلاف مہم چلائی ، بجلی چوروں کے خلاف 30ہزار مقدمات درج کرائے ، چارہزار کو جیل بھیجا ، اپنے ملازمین کے خلاف بھی کارروائی کرکے برطرف کیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer