اسٹاک مارکیٹ میں آج سرمایہ کاروں کے181ارب روپے ڈوب گئے

اسٹاک مارکیٹ میں آج سرمایہ کاروں کے181ارب روپے ڈوب گئے


کراچی(24 نیوز) پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں شدید مندی رہی، ہنڈرڈ انڈیکس آٹھ سو سے زائد پوائنٹ کی کمی سے چونتیس ہزار کی سطح سے بھی نیچے بند ہوا، 4 گھنٹوں کی ٹریڈنگ میں ہی سرمایہ کاروں کے 181ارب روپے ڈوب گئے۔

آئی ایم ایف سے معاہدے کا اسٹاک مارکیٹ پر کوئی مثبت اثر نہیں ہو سکا،، بیل آوٹ پیکج کے بعد پہلے روز اسٹاک مارکیٹ کاروبار کے مثبت آغاز کے کچھ دیر بعد ہی مندی کا شکار ہو گئی، ٹریڈنگ کے دوران ہنڈرڈ انڈیکس میں پانچ سو سے زائد پوائنٹ کے اضافے کے بعد نو سو سے زائد پوانٹ کی کمی بھی دیکھی گئی۔کاروبار کے اختتام پر ہنڈرڈ انڈیکس آٹھ سو سولہ پوائنٹ کی کمی سے تینتیس ہزار نو سو پر بند ہوا، جو گزشتہ تین سال کی کم ترین سطح ہے، تین سو چودہ کمپنیوں کے شئیرز کا لین دین ہوا، صرف اڑتیس کی قیمت میں اضافہ جبکہ دو سو تریسٹھ کی قیمت کم ہوئی۔

ماہرین کے مطابق ملکی اقتصادی اور سیاسی صورتحال میں بے یقینی اور آئی ایم ایف کے دباؤ پر ٹیکسوں اور شرح سود میں اضافے اور روپے کی قدر میں مزید کمی کے خدشات کے باعث بازار میں مندی دیکھی جا رہی ہے۔

Malik Sultan Awan

Content Writer