گمشدہ بچے کیس،عدالت پولیس پر برہم،آئی جی سندھ کو طلب کرلیا


کراچی( 24نیوز ) سندھ ہائیکورٹ میں 23 گمشدہ بچوں کی بازیابی سے متعلق درخواستوں کی سماعت کے دوران عدالت نے پولیس کی کارکردگی پر برہمی کااظہارکیا ہے اور آئندہ سماعت پر آئی جی سندھ کو خود پیش ہونے کاحکم دے دیا ،عدالت نے بچوں کو بازیاب سے متعلق تین ہفتوں میں رپورٹ طلب کرلی ہے۔
سرکاری وکیل نے کہا بچے کی گمشدگی کے حوالے سے ایف آئی آر درج کر لی ہے،ڈی آئی جی کرائم نے کہا ہم نے آئی جی سندھ کے حکم پر ٹیم بنائی ایک بچی نورین کو بازیاب کروالیا ہے ،جس پر عدالت نے برہمی کااظہارکرتے ہوئے ریمارکس دئیے کہ اب تک 23 میں سے صرف ایک بچے کو بازیاب کروایا گیا اپ کی تحقیقات بہت ہی سست ہے ،عدالت نے کہا آئی جی سندھ بچوں کی بازیابی کے حوالے سے ڈی آئی جی کی سرابراہی میں ایک بار پھر کمیٹی بنائی۔
عدالت نے بچوں کی بازیابی سے متعلق اے وی سی سی (سی آئی اے)کی کارکردگی پربھی عدم اطمینان اظہارکیا اورکہا کہ جب تک بچے بازیاب نہیں ہوتے ڈی آئی جی ہر سماعت پر پیش ہوں عدالت نے آئندہ سماعت آئی جی سندھ کلیم امام کو خود پیش ہونے کاحکم دیتے ہوئے بچوں کی بازیابی سے متعلق تین ہفتوں میں رپورٹ طلب کرلی۔