گریڈ 20 سے 22 کے37 سے زائد افسران تقرری سے محروم

گریڈ 20 سے 22 کے37 سے زائد افسران تقرری سے محروم


اسلام آباد( 24نیوز )حکومت کے پاس گریڈ 20 سے 22کے37سےزائد افسران تقرری کے منتظر ہیں،حکومت نے اہم وزارتوں، ڈویژنوں اورمحکموں میں پہلے سےتعینات افسران کو اضافی چارج سونپ دیئے۔

تفصیلات کے مطابق گریڈ20سے 22 کے 37 سے زائد افسران گزشتہ کئی ماہ سے تقرری کے منتظر ہیں،لیکن اہم وزارتوں میں مستقل سیکرٹریز تعینات،بیشتراداروں کے سربراہان،ایڈیشنل سیکرٹریز اورڈی جیز کے عہدے کئی ماہ سے خالی ہیں،اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کے پاس گریڈ 22 کے 7 ، گریڈ 21 کے 17 اور گریڈ 20 کے 13 افسران کئی ماہ سے تقرری کے منتظر ہیں۔

دستاویز کےمطابق وزارت اطلاعات،وزارت قانون ،وزارت نیشنل ہیلتھ، ریونیو ڈویژن میں مستقل سیکرٹری سے محروم ہیں،سیکرٹری ایف پی ایس سی مختلف وزارتوں کے سربراہان اضافی چارج پر کام کررہے ہیں،سیکرٹری صدرمملکت،سپیشل سیکرٹری توانائی ،سپیشل سیکرٹری پیٹرولیم،سپیشل سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن ،سپیشل سیکرٹری بین الصوبائی رابطہ،ایگزیکٹو ڈائریکٹر نیوٹیک،ممبرز انچارج وفاقی محتسب کے عہدے کئی ماہ سے خالی پڑے ہیں۔

چیئرمین ایپزا ، چیئرمین سٹیٹ لائف،سینئر ممبر لینڈ کمیشن ، ممبر لینڈ کمیشن ، سینئر ممبر پی ایم آئی سی،ممبر پی ایم آئی سی،ایڈیشنل سیکرٹری لاء اینڈ جسٹس،ایڈیشنل سیکرٹری میری ٹائم افئیر، ایڈیشنل سیکرٹری نیشنل سکیورٹی ڈویژن کے علاوہ دیگر عہدے بھی خالی ہیں۔

گریڈ 20 سے 22 کے 10 افسران گزشتہ کئی ماہ سے رخصت پر بیرون ممالک میں موجود ہیں،حکومت نے اہم وزارتوں، ڈویژنوں اورمحکموں میں پہلے سےتعینات افسران کو اضافی چارج سونپ دیئے۔