جنرل اسمبلی کے اجلاس کے بعد بتاؤں گا کب لائن آف کنٹرول پر جانا ہے: وزیراعظم



مظفر آباد(24نیوز)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مودی بزدل ہے ایک بزدل انسان ہی انسانوں پر ظلم کرسکتا ہے، مودی جتنامرضی ظلم کرلے کامیاب نہیں ہوگا، دنیا میں کشمیرکاسفیربن کرجاؤں گا، بھارت نے کچھ کیا تو اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے آزاد کشمیر میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کا مسئلہ انسانیت کا مسئلہ ہے، مودی نے مقبوضہ کشمیرمیں عوام کو 40روز سےبندکررکھا ہے، مودی جتنامرضی ظلم کرلے کامیاب نہیں ہوگا، ایک بزدل انسان ہی انسانوں پر ظلم کرسکتا ہے۔ نریندر مودی کشمیریوں کو شکست نہیں دے سکتا، مودی کوبتاناچاہتاہوں ساری دنیا میں کشمیرکاسفیربن کرجاؤں گا، دنیا بھر کو بتاؤں گا آرایس ایس کا نظریہ کیا ہے۔انھوں نے کہا آرایس ایس میں مسلمانوں کیلئے نفرت بھری ہوئی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ سب انتظارکریں اگلےہفتے جنرل اسمبلی میں خطاب کیلئےجارہاہوں، نریندرمودی بچپن سےانتہاپسندتنظیم آرایس ایس کا رکن ہے، کشمیرکےعوام میں موت کا خوف ختم ہوچکا ہے،امریکی سینیٹرز نےبھی کشمیر کی صورتحال پر ٹرمپ کو خط لکھاہے،اپنے کشمیری بھائیوں کو مایوس نہیں کروں گا،مودی لوگوں کو انتہاپسندی کی طرح دھکیل رہاہے،آج تک کوئی کشمیریوں کیلئےاس طرح کھڑا نہیں ہو جس طرح میں ہواہوں، بھارت میں 20کروڑ مسلمان ہیں مودی ان کو کیاپیغام دےرہےہیں؟برطانیہ کی پارلیمنٹ میں کشمیریوں پر پہلی بار بات ہوئی، یورپی پارلیمنٹ نے کہا مسئلہ کشمیرکا حل یواین اوقراردادوں پرہونا چاہیے۔اوآئی سی نےبھی کہاکشمیرمیں ظلم ہورہاہےکرفیوکوہٹایاجائے،جب ظلم انتہاپرجاتا ہےتوہرانسان فیصلہ کرلیتا ہےبےعزت کی زندگی سے موت اچھی ہے۔مودی کان کھول کر سن لوایمان والا آدمی موت سے نہیں ڈرتا،کشمیر میں جو کچھ ہورہاہے اس پر ردعمل آئے گا، ہندوستان کےمسلمانوں میں ردعمل آئےگا، سوا ارب مسلمانوں کی طرف سےکشمیر پر ردعمل آئےگا، یہ وہ قوم ہے جو آخری دم تک مقابلہ کرے گی۔بھارت نےکچھ کیا تواینٹ کا جواب پتھر سے دیا جائے گا،کشمیریوں کو اپنے مستقبل کے فیصلے کا حق ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اگلے ہفتے نیو یارک میں جنرل اسمبلی کے اجلاس میں جا رہا ہوں، جنرل اسمبلی کے اجلاس میں کشمیریوں کو مایوس نہیں کروں گا، کشمیریوں کے لیے ایسا اسٹینڈ لوں گا جو آج تک کسی نے بھی نہیں لیا۔ انہوں نے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مجھے پتہ ہے کہ سب چاہتے ہیں کہ وہ لائن آف کنٹرول پر جائیں لیکن جب تک میں نہ کہوں آپ نے لائن آف کنٹرول پر نہیں جانا۔ پہلے مجھے اقوام متحدہ جانے دیں دنیا کو بتانے دیں، اس کے بعد فیصلہ کریں گے کہ لائن آف کنٹرول جانا ہے یا نہیں۔ 

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔