افغان طالبان نے امریکہ کو بڑی دھمکی دے دی

افغان طالبان نے امریکہ کو بڑی دھمکی دے دی


کابل(24 نیوز) امریکا اگرچاہتا ہے اس کے فوجیوں پرحملے نہ ہوں تو وہ معاہدہ کرلے، امریکا کارروائی کرے گا تو فوجیوں پرحملے بھی جاری رہیں گے۔ 

معاہدہ ختم کرنے پرطالبان نے امریکا کو دوٹوک جواب دے دیا۔ طالبان کا کہنا ہے امریکا اپنے فوجیوں کی حفاظت چاہتا ہے تووہ معاہدہ کرلے، امریکا اگررات کے اندھیرے میں آپریشن جاری رکھے گا توہم بھی وہی کریں گے جو18سال سے کررہے ہیں۔

طالبان کےترجمان سہیل شاہین کا کہنا ہے کہ امریکا کا معاہدہ ختم کرنے کا اعلان حیران کن تھا۔ افغانستان میں فائر بندی کبھی بھی مذاکرات کا حصہ نہیں رہی تاہم افغان حکومت کے ساتھ مذاکرات پر بات کی گئی لیکن وہ بھی اس صورت میں کہ جب افغانستان سے غیر ملکی فوجیں مکمل طور پر نکل جائیں۔

طالبان ترجمان نے کہا کہ دوسرے افغانوں کی طرح ہم بھی امریکا کے ساتھ مذاکرات کرنا چاہتے ہیں، فائربندی کا معاہدہ بعد کی بات ہے پہلے افغانستان سے غیر ملکی فورسز کا انخلا چاہتے ہیں۔

سہیل شاہین نے بتایا کہ معاہدے کی صورت میں طالبان کی جانب سے امریکا کو افغانستان سے فوجوں کے انخلا کے لیے محفوظ راستہ دینے کا نکتہ بھی شامل تھا لیکن یہ چیز معاہدہ طے پا جانے کی صورت میں تھی۔

Malik Sultan Awan

Content Writer