لاہور، ڈی آئی جی انویسٹی گیشن انعام وحید کو کیوں او ایس ڈی بنایا گیا؟

لاہور، ڈی آئی جی انویسٹی گیشن انعام وحید کو کیوں او ایس ڈی بنایا گیا؟


لاہور(24نیوز) ڈی آئی جی انویسٹی گیشن انعام وحید کوکیوں او ایس ڈی بنادیاگیا؟24نیوز اصل حقائق سامنے لے آیا۔وزیراعلیٰ نے اعلیٰ افسر کو بچانے کیلئے انعام وحید کو قربانی کا بکرا بنایا۔

 سی سی پی اوآفس کی غلطی کی سزا ڈی آئی جی آپریشن کوبھگتناپڑ گئی۔24نیوز ڈی آئی جی انعام وحیدکواو ایس ڈی بنانےکی اصل وجہ سامنے لےآیا۔

ذرائع کاکہناہے سی سی پی او آفس نے وزیراعظم پورٹل پر غلط جواب بھجوایا تھا جس پر وزیر اعلیٰ آفس نے کارروائی کی۔وزیراعظم پورٹل پر آنے والی ہر شکایت کا جواب دینا سی سی پی او آفس کی ذمہ داری ہوتا ہےلیکن ذمہ دار افسران کو بچانے کیلئے ڈی آئی جی انعام وحید کو بغیر انکوائری ہی او ایس ڈی بنا دیا گیا۔

ذرائع نے دعوی کیا کہ سی سی پی او بشیر احمد ناصرعہدے سے ہٹائے جانے کے بعداہم شخصیت کی سفارش پردوبارہ سی سی پی او لاہور تعینات ہوئے تھے اس لئے انکے خلاف کارروائی نہ ہوئی۔ انعام وحید کو بغیر انکوائری او ایس ڈی کرنے سے پولیس کا مورال مزیدگرگیا۔جبکہ پولیس افسران نےبھی انعام وحید کو او ایس ڈی کرنے پر سخت ردِعمل کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعظم پورٹل پر جواب نہ دینے پر ڈی آئی جی انویسٹی گیشن انعام وحید کو او ایس ڈی بنایا گیا۔لیکن جس مقدمہ کا ذکر کیا گیاوہ کب کاخارج بھی کیاجاچکاہے۔گیارہ دسمبر دو ہزار اٹھارہ میں درج ہونیوالے لڑکی کے اغوا کا معاملہ حل کرنے پر سی سی پی او بشیر احمد ناصر نےٹیم کو 50 ہزار انعام بھی دیا تھا۔لڑکی رمشاء نے عدالت میں اغواء نہ ہونے کا بیان بھی دیا تھا۔بیان میں رمشاء نے بتایا کہ وہ والدہ کیساتھ جھگڑے کے بعد گھر چھوڑ کر گئی تھی۔لاہور،ڈی آئی جی انویسٹی گیشن انعام وحید کوکیوں او ایس ڈی بنادیاگیا؟