کراچی:جرائم کا بازار گرم، رواں سال میں 25 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا


کراچی (24نیوز) سال دوہزار اٹھارہ کراچی میں جرائم کا بازار گرم رہا۔ پچیس افراد کو موت کو قتل کردیا گیا جبکہ چھینا چھپٹی کی وارداتیں بھی شہریوں کے لئے وبالِ جان بنی رہیں۔

 سی پی ایل سی رپورٹ کے مطابق شہر میں جنوری سے لیکر اب تک  25 افراد کو نا معلوم افراد نے قتل کردیا جس میں پولیس اور رینجرز اہلکار بھی شامل تھے۔ چار بھتہ خوری، 30 تالا توڑ، ایک بینک ڈکیتی کی وارداتیں ہوئیں۔ ملزمان نے اے ٹی ایم مشینوں کو بھی نہ چھوڑا، رپورٹ کے مطابق شہر سے 15 نومولود کی لاشیں برآمد ہوئیں۔

رپورٹ کے مطابق دو سو سے زائد گاڑیاں چھینی اور چوری کی گئیں۔ دو ہزار شہری ایسے تھے جنہیں موٹر سائیکلوں سے محروم کردیا گیا، اسلحے کے زور پر 3 ہزار موبائل فونز چھین لیئے گئے۔ ان پینتالیس دنوں میں قانون کے نفاذ کے لئے پولیس کی کارکردگی مایوس کن رہی ، جس کے حوالے سے سنجیدگی سے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔