منی لانڈرنگ اور کالے دھن کی سرمایہ کاری روکنے کیلئے 40 ہزار کا بانڈ ختم کرنے کا فیصلہ

منی لانڈرنگ اور کالے دھن کی سرمایہ کاری روکنے کیلئے 40 ہزار کا بانڈ ختم کرنے کا فیصلہ


کراچی(24نیوز) حکومت نے منی لانڈرنگ اور کالے دھن کی سرمایہ کاری کی روک تھام کے لیے بڑا فیصلہ کرلیا. اسٹیٹ بینک نے 40 ہزار روپے مالیت کے نئے پرائز بانڈز کی چھپائی روک دی.

حکومت نے منی لانڈرنگ اور کالے دھن کی سرمایہ کاری کی روک تھام کے لیے بڑا فیصلہ کیا ہے۔ اسٹیٹ بینک نے 40 ہزار روپے والے نئی سیریز کے پرائز بانڈز کا اجرا 15 فروری سے روکنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ ادارہ قومی بچت کے مطابق 40 ہزار روپے کے پہلے جاری ہونے والے بانڈز کی فروخت اور کیش کرانے کا عمل جاری رہے گا۔

پرائز بانڈز کی قرعہ اندازی اور انعامی رقوم کی ادائیگی بھی جاری رہے گی.دسمبر 2018 تک مختلف مالیت کے پرائز بانڈز میں 915 ارب روپے کی سرمایہ کاری کی جاچکی ہے جبکہ دسمبر 2018 تک 40 ہزار روپے مالیت کے پرائز بانڈز میں 259 ارب روپے کی سرمایہ کاری ہوچکی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ کرپشن کرنے والے اور کالے دھن والے چالیس ہزار روپے والے پرائز بانڈز میں سرمایہ کرتے تھے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔