میٹنگ کے نام پر جرمانے،سرکاری افسر تاجروں سے ہاتھ کرگئے

میٹنگ کے نام پر جرمانے،سرکاری افسر تاجروں سے ہاتھ کرگئے


ڈیرہ اسماعیل خان( 24نیوز )تبدیلی آنہیں رہی تبدیلی آگئی ہے،ڈی آئی خان میں اسسٹنٹ کمشنر نے تاجروں کو دفتر میں بلا کر ہاتھ کرلیا،میٹنگ کےنام پرپانچ، پانچ ہزارتک جرمانے کی رسیدیں تھمادیں،تاجرسراپا احتجاج بن گئے۔

ڈیرہ اسماعیل خان میں اسسٹنٹ کمشنر کا دفتر لوٹ مار کا اڈہ بن گیا۔جہاں آفس ٹائمنگ کےبعد عملے کے ارکان دیہاڑیاں لگانے لگے ہیں،عملے نے دوسو سے زائد تاجروں کو میٹنگ کے نام پر دفتر بلایا ،تین گھنٹے تک تاجروں کو دفتر میں قید میں رکھا گیا،عملے نے تاجروں کو سادہ کاغذ پر ایک پروانہ تھمایا جس پر دو سے پانچ ہزار تک جرمانہ درج تھا ،گیٹ پر بیٹھا پولیس اہلکار جرمانہ ادا کرنے کی پرچی دکھائے بغیر کسی کو باہر جانے کی اجازت نہ دیتا تھا ۔

تاجرناروا سلوک اوربھاری جرمانوں پر سراپا احتجاج بن گئے،جرمانے کی پرچیاں دکھاتے رہے، دلچسپ امر یہ ہے کہ تمام کارروائی کے وقت اسسٹنٹ کمشنر دفتر میں موجود نہیں تھے۔