میڈیکل اسٹوروں سے بھینسوں کے انجکشن ضبط کرنے کا حکم،رپورٹ15دن میں طلب


کراچی (24نیوز) چیف جسٹس ثاقب نثار نے ڈبہ پیک دودھ کی فروخت کے ازخود نوٹس کی سماعت کے دوران ایف آئی اے کو بھینسوں کو لگائے جانے والے ٹیکے ضبط کرنے کی ہدایت کردی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے ڈبہ پیک دودھ کی فروخت کے ازخود نوٹس کی سماعت کی، دوران سماعت ناظر نے رپورٹ عدالت کے روبروپیش کرتے ہوئے بتایا کہ متعددمقامات پرچھاپے مارے اور ریکارڈچیک کیاگیا،رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بھینسوں کولگائے جانے والے ٹیکوں کے39پیکٹس میڈیکل سٹورسے ضبط کئے۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیاکوئی ڈرگ انسپکٹرموجود ہے؟،بتایاجائے ڈرگ انسپکٹرکیاکام کررہے ہیں؟سپریم کورٹ نے سیکرٹری صحت کو حکم دیا کہ ٹیکوں کوضبط کرنے کاکام ڈرگ انسپکٹرزکودیاجائے،دیکھاجائے مارکیٹوں میں یہ ٹیکے کتنی تعدادمیں ہیں،انہوں نے کہا کہ ڈرگ انسپکٹرزمارکیٹوں میں چھاپے ماریں اورٹیکے ضبط کریں،ایف آئی اے، ڈرگ انسپکٹرزڈسٹری بیوٹراورریٹیلرزکے سٹاک کاجائزہ لیں،چیف جسٹس نے ایف آئی اے کوبھی ٹیکے ضبط کرنے کی ہدایت کر دی۔